site
stats
پاکستان

سانحہ لاہور: خودکش حملہ آورکون تھا، خاکے نےسوال اٹھا دیا

لاہور: اقبال پارک لاہور میں حملے کا خودکش بمبار کون تھا، مظفرگڑھ کامحمد یوسف یا کوئی اور مبینہ حملہ آور کے خاکے سے معاملہ الجھ گیا۔

پولیس کی ابتدائی معلومات غلط نکلیں، جس کا شناختی کارڈ ملا وہ حملے میں ملوث نہیں تھا، حملے کے بعد جائے وقوعہ سے ایک کٹا پھٹا شناختی کارڈ ملا جس کو بنیاد بنا کرپولیس نے محمد یوسف کو مبینہ خودکش حملہ آورٹھہرایا۔

تفتیش پرانکشاف ہوا کہ یوسف لاہورمیں فیروز پور روڈ پرایک آن لائن مدرسےمیں قران پڑھاتا تھا، پولیس اورایجنسیوں نےادارے پر چھاپہ مارا اوریوسف کے زیراستعمال سامان قبضےمیں لے لیا، یوسف کے شناختی کارڈمیں اس کاآبائی علاقہ چوک قریشی مظفرگڑھ تحریر تھا۔

مظفر گڑھ کا محمد یوسف کچھ دیر میں ہی دہشت گرد قرار پایا اور شناختی کارڈ اس کی جیب میں تھا۔ عوامی حلقے حیران تھے کہ خود کش بمبار کی جیب میں شناختی کاڑد آخر کیوں تھا؟

پولیس نے یوسف کے گھرپرکارروائی کرکےتین بھائیوں اورچچاکوحراست میں لے لیا۔ یوسف کےوالدین عمرے پرگئے ہوئےہیں، یوسف کو مشتبہ قراردیکرپیش رفت کے بعد پولیس نےمبینہ خودکش حملہ آورکا خاکہ جاری کیا۔

یہ خاکہ یوسف سےنہیں ملتا،پولیس کا کہنا ہے کہ مبینہ حملہ آورکا خاکہ عینی شاہدین سے پوچھ کر بنایا گیا۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top