The news is by your side.

Advertisement

سانحہ صفورا کا اہم ملزم سہولت کار عادل مسعودبٹ گرفتار

کراچی : سی ٹی ڈی نے سانحہ صفورا کے اہم سہولت کار عادل مسعودبٹ کو گرفتار کرلیا۔ ملزم نجی یونیورسٹی میں چیف ایگزیکٹو تھا۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ صفورا کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ہے۔ کاؤنٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) پولیس نے کلفٹن کے علاقے میں کااروائی کر کےسانحہ صفورا کے اہم سہولت کار عادل مسعودبٹ کو گرفتارکرلیا ہے۔ جس نے خوفناک انکشافات کئے ہیں۔

ملزم کو پہلے سے گرفتار سانحہ صفورا کے سہولت کار خالد یوسف کی نشاندہی پر گرفتار کیا گیا جب کہ ملزم القاعدہ کو فنڈنگ اور سانحہ صفورا کے ملزمان کو سہولت فراہم کرنے بھی ملوث ہے۔

سی ٹی ڈی کے انچارج عمر خطاب نے پریس کانفرس میں بتایاکہ سانحہ صفورا کا اہم ملزم عادل مسعود بٹ کو گرفتار کرلیا گیاہے جو اعلیٰ تعلیم یافتہ ہے، اور اس نے 1994 میں دوستوں کے ساتھ مل کر کالج بھی قائم کیا جب کہ ملزم کا تعلق اسلامی تنظیم سے ہے اور اس کے سانحہ صفورا کے مرکزی ملزم سعد عزیز کے ساتھ بھی تعلقات ہیں۔

عمر خطاب کا کہنا تھا ملزم نے انکشاف کیا ہے خواتین کا ایک منظم گروہ ہے جو خواتین کی ذہن سازی کرتا ہے، انچارج سی ٹی ڈی نے بتایا کہ سانحہ صفورا کے آٹھ ملزمان کو گرفتار کیاگیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سی ٹی ڈی بھرپور طریقے سے کالعدم تنظمیوں کے خلاف کارروائیاں کررہی ہے۔ واضح رہے کہ رواں سال مئی کے مہینے میں کراچی کے علاقے صفورا گوٹھ میں اسماعیلی کمیونٹی کی بس پر حملہ کیا گیا تھا جس میں خواتین اور بچوں سمیت 44 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں