site
stats
اے آر وائی خصوصی

سرعام کی ٹیم نے جعلی ماہرنجوم کی حقیقت بے نقاب کردی

کراچی : خواتین کے مسائل حل کرانے کے لیے تعویزوں کے نام پر ان کا جنسی استحصال کرنے والے نام نہاد نجومی علی تبسم کو اے آر وائی نے ایک بار پھر بے نقاب کردیا، ٹی وی پر پروگرام نشر نہ کرنے کیلئے سر عام کی ٹیم کو ڈھائی کروڑ روپے رشوت کی پیشکش کردی۔

تفصیلات کے مطابق چار سال پہلے اے آر وائی نیوز پر بے نقاب ہونے والے جعلی ماہر نجوم علی تبسم نے اپنا مکروہ دھندا دوبارہ شروع کردیا تھا، سر عام کی ٹیم نے لاتعداد شکایتوں کے بعد ایک بار پھر اس کیخلاف کارروائی کا فیصلہ کیا۔

سرعام کی ٹیم کو سینکڑوں شکایات موصول ہوئی تھیں کہ یہ شخص مسائل کے حل کیلئے آنے والی خواتین کی عملیات، تعویزات اور مختلف بہانوں سے آبرو ریزی کرتا ہے، جس پر ایکشن لیتے ہوئے سر عام ٹیم نے چار سال بعد دوبارہ اس کے دفترپر جاکر اس کے انتہائی مکروہ قسم کے بیانات اور تہلکہ خیز انکشافات خفیہ ریکارڈنگ کے ذریعے محفوظ کرلئے۔

تمام ریکارڈنگ کے بعد جب سرعام کی ٹیم پولیس کے ہمراہ اس کے دفتر پر پہنچی تو اس نے پہلے تو ڈرامائی انداز میں مزاحمت کی اور جب بات نہ بنتے دیکھی تو انتہائی ڈھٹائی کے ساتھ پروگرام ٹی وی پر نشر نہ کرنے کے عوض سرعام کی ٹیم کو ڈھائی کروڑ روپے رشوت کی پیکشکش کی جسے ٹیم کے خفیہ کیمروں نے ریکارڈ کرلیا۔

جعلی نجومی مختلف چینلز پر لاکھوں روپے کے عوض پروگرام خرید کر اپنی پبلسٹی بھی کیا کرتا تھا، جس میں وہ لوگوں بالخصوص خواتین کو مختلف عملیات بتا کر اپنی جانب راغب کرتا تھا۔

پروگرام دیکھ کرعام لوگ یہ سمجھتے تھے کہ اسے بحیثیت مہمان مدعو کیا گیا ہے۔ اس تمام تر کارروائی کے بعد سر عام کی ٹیم نے اس کے خلاف مقدمہ درج کرواکر لاک اپ میں بند کرادیا۔

بات یہیں ختم نہیں ہوئی اس شخص کے اثرو رسوخ کا اندازہ اس بات سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے کہ تمام تر ویڈیو ریکارڈنگ کے ثبوتوں کے باوجود لاک اپ میں ایک رات بھی قیام نہیں کرایا گیا۔

اس کو ساری رات بڑے احترام کے ساتھ پولیس افسر کے کمرے میں کرسی پر بٹھایا گیا اور صبح عدالت میں پہلی پیشی پر ہی اسے ضمانت پر رہا کردیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top