The news is by your side.

Advertisement

سرفراز احمد نے اپنے بیٹے عبداللہ کی یادداشت کا امتحان لے لیا

کراچی: قوم کو 2017 میں چیمپئنز ٹرافی کا تحفہ دینے والے چیمپئن کپتان سرفراز احمد نے اپنے بیٹے عبداللہ کی یادداشت کا امتحان لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی 2017 کے فائنل معرکے میں بھارتی سورماؤں کو شکست دے کر قومی ٹیم نے سب کا سر فخر سے بلند کردیا تھا، چیمپئنز ٹرافی کے فاتح کپتان سرفراز احمد نے اپنے بیٹے عبداللہ کا امتحان لینے کا فیصلہ کیا۔

سرفراز نے چیمپئنز ٹرافی کی فتح کی تیسری سالگرہ منائی اور عبداللہ سے پوچھا کہ بیٹا آج کے دن ہم کیا جیتے تھے؟ جس پر عبداللہ نے بتایا کہ چیمپئنز ٹرافی، سرفراز نے دوسرا سوال کیا کہ ہم نے کس کو ہرایا تھا، بیٹے نے یہ بھی ٹھیک بتایا بھارت کو ہرایا تھا۔

سابق کپتان نے بیٹے سے پوچھا کہ اچھا یہ بتائیں کہ چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں سنچری کس نے بنائی تھی، جس پر عبداللہ نے بتایا کہ فخر زمان چاچو نے اور نصف سنچری حفیظ چاچو، عماد وسیم چاچو اور اظہر چاچو اور بابر چاچو نے بنائی تھی۔

علاوہ ازیں عبداللہ نے فائنل کے وکٹ حاصل کرنے والے بولرز کے نام بھی بتائے اور کہا کہ فائنل میچ میں وکٹیں محمد عامر، شاداب خان اور حسن علی نے حاصل کی تھیں۔

سرفراز نے بیٹے سے کہا کہ آخر میں ہم کیا بولیں گے تو عبداللہ نے ’پاکستان زندہ باد‘ کا نعرہ لگایا۔

یاد رہے کہ آج ہی کے دن تین سال قبل پاکستان نے آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی 2017 میں فائنل میں پاکستان نے بھارت کو شکست دے کر ٹرافی اپنے نام کی تھی، فخر زمان نے سنچری جڑی تھی جبکہ محمد عامر نے بھارتی بیٹنگ لائن کو تہس نہس کردیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں