The news is by your side.

Advertisement

سرفراز احمد میچ کے دوران شدید غصے میں کیوں تھے؟

کراچی : پی ایس ایل کی ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹر کے کپتان سرفراز احمد گزشتہ روز ٹیم کی ناقص کارکردگی پر کافی برہم دکھائی دیے، جس کا اظہار میچ کے دوران ان کے رویے میں دیکھا گیا۔

سرفراز احمد کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ اکثر میچوں میں کسی نہ کسی بات پر کھلاڑیوں پر اظہار برہمی اور انہیں ڈانٹ ڈپٹ کرتے رہتے ہیں۔

گزشتہ روز کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں ہونے والے میچ میں بھی ان کا یہی طرز عمل دیکھنے میں آیا، جسے لاہور قلندرز نے19ویں اوور میں باآسانی جیت لیا۔

میچ میں شکست پر کپتان سرفراز احمد غصے میں آگئے، ان کا غصہ ٹھنڈا کرنے کیلئے کوچ معین خان کو آنا پڑا، ایک ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ میچ کے بعد گراؤنڈ سے باہر جاتے ہوئے انہوں نے محمد حفیظ سے ہاتھ بھی نہیں ملایا۔

حفیظ سب سے آگے اور سرفراز اپنی ٹیم کی قطار میں سب سے پیچھے تھے۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان محمد حفیظ کے ساتھ ہاتھ ملائے بغیر آگے بڑھ گئے۔

بعد ازاں سرفراز نے حفیظ کے ساتھ مثبت رویے کا اظہار کرتے ہوئے انہیں آگے چلنے کا کہا جس پر حفیظ نے خوشی کا اظہار کیا اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی دیگر انتظامیہ کے ساتھ ہاتھ ملایا۔

اس حوالے سے اے آر وائی نیوز کے پروگرام با خبر سویرا میں سابق بالر تنویر احمد کا کہنا تھا کہ کپتان کو چاہیے کہ وہ گراؤنڈ کے اندر بالر کے ساتھ سخت رویہ اختیار نہ کرے۔

انہوں نے ویرات کوہلی اور دھونی کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ وہ کبھی اپنے کسی بھی کھلاڑی کو میدان میں نہیں ڈانٹتے بلکہ ڈریسنگ روم میں ہی بات چیت کرتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں