site
stats
پاکستان

مسئلہ کشمیر پر امریکہ کی ثالثی کا خیر مقدم کرینگے، سرتاج عزیز

اسلام آباد: مشیرامور خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ  دنیا میں انتخابی مہم کے بیانات پالیسیوں سے مختلف ہوتے ہیں، دہشتگردی کا خاتمہ امریکہ اور پاکستان کی پہلی ترجیح ہیں، مسئلہ کشمیر پر امریکہ کی ثالثی کا خیر مقدم کرینگے۔

تفصیلات کے مطابق  وزیراعظم کے مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے ڈونلڈ ٹرمپ کو امریکہ کے نئے صدر منتخب ہونے پر مبارک باد دی ، انھوں نے کہا کہ امید ہے ٹرمپ ذمہ دار امریکی صدر ہونے کاثبوت دیں گے، ٹرمپ نے کہا تھا کہ میں بھارت اور پاکستان کے درمیان مصالحت کرانا چاہتا ہوں ، ہم کشمیر پر بھارت اور پاکستان کے درمیان امریکہ کی ثالثی کا خیر مقدم کرینگے۔

سرتاج عزیز نے کہا کہ امریکہ سے تعلقات میں بہتری آسکتی ہے، مستحکم امریکی معیشت سے پاکستان کو بھی فائدہ ہوگا،امن ہماری خواہش ہے،امریکہ اور ہمارے مفادات مشترک ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے سامنے کشمیر کا مسئلہ رکھا جائے گا، ہماری پالیسی درست سمت میں جارہی ہے۔

مشیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے عدم مداخلت کی پالیسی بنائی ہے، وزیراعظم نے ڈونلڈٹرمپ کو پاک امریکا تعلقات سے آگاہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم  نواز شریف نے ڈونلڈ ٹرمپ کو امریکا کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کی اور نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔


مزید پڑھیں : وزیراعظم نواز شریف کی ڈونلڈ ٹرمپ کو مبارکباد


وزیر اعظم نے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کا انتخاب امریکی عوام کی کامیابی ہے۔ انتخاب امریکی عوام کی جمہوریت اور انسانی حقوق پریقین کی جیت ہے، دونوں ملکوں کے تعلقات مشترکہ مفادات اورباہمی احترام پرمبنی ہیں۔ امریکی قیادت کےساتھ مل کر کام کرنے کے خواہاں ہیں ۔

انکا کہنا تھا کہ امریکا کےساتھ تعلقات مزید مستحکم کرنے کےلئے پُرعزم ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top