The news is by your side.

Advertisement

کشمیر اور بلوچستان کا موازنہ نہیں کیا جاسکتا، سرتاج عزیز

اسلام آباد: مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ بھارتی بیانات عالمی برادری کی توجہ ہٹانے کی کوشش ہے، بھارتی وزیر خارجہ کی اقوام متحدہ کے اجلاس میں ہرزہ سرائی کا جواب تیار کرلیا۔

سینیٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سرتاج عزیز نے کہا کہ بھارتی بیانات اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی ہیں،پاکستان میں بھارتی مداخلت کے ثبوت اقوام متحدہ میں جلد پیش کریں گے۔

کشمیر اور بلوچستان کا موازنہ نہیں کیا جاسکتا

سرتاج عزیز کہا کہ کشمیر اور بلوچستان کا موازنہ نہیں کیا جاسکتا، بھارتی وزیر خارجہ کی ہرزہ سرائی کا جواب تیار کرلیا، بھارت مقبوضہ کشمیر میں موجود اپنی افواج میں اضافہ کررہا ہے، کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبایا نہیں جاسکتا، کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر او آئی سی اور اقوام متحدہ سمیت دیگر تنظیموں کو خطوط لکھے ہیں۔

او آئی سی کی سطح پر ہماری حمایت کی گئی

انہوں نے کہا کہ او آئی سی کی سطح پر ہماری حمایت کی گئی، کشمیر کا اصل مسئلہ دیر پا حل ہے کشمیریوں کی تحریک آزادی رنگ لائے گی، اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو کشمیر میں مظالم کی تصاویر دکھائی ہیں۔

ہمارا کارنامہ ہے کہ بھارت کی بالا دستی قبول نہیں کی

مشیر خارجہ نے کہا کہ ہمارا بڑا کارنامہ ہے کہ ہم نے بھارت کی بالا دستی قبول نہیں کی، کشمیر کی صورتحال بھارت کی پالیسی کا ردعمل ہے، مودی کی کوشش ہے کہ بھارت کی بالادستی قائم ہو،مودی کی بالادستی کی کوششیں ناکام ہورہی ہیں، کشمیر میں بھارت مظالم کی عالمی سطح پر تحقیقات کرائی جائے،کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کا روڈ میپ ابھر رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں