سعودی ایمنسٹی اسکیم سے 5 لاکھ 72 ہزار غیر قانونی مقیم مستفید saudi amnesty scheme
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب ایمنسٹی اسکیم: 5 لاکھ 72 ہزار غیر قانونی مقیم مستفید

ریاض: سعودی عرب میں غیر قانونی مقیم تارکین وطن کی بہت بڑی تعداد نے ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھانا شروع کردیا، مستفید ہونے والوں کی تعداد 5 لاکھ 72 ہزار 488 تک پہنچ گئی۔

سعودی گزٹ کے مطابق یہ بات جوازات پاسپورٹ آفس نے اپنے ایک جاری کردہ بیان میں بتائی ہے۔

سعودی وزارت داخلہ کی جانب سے ملک بھر میں موجود غیر قانونی تارکین وطن کےلیے 90 روزہ ایمنسٹی اسکیم 29 مارچ سے جاری ہے جس کے تحت غیر ملکی مزدور اور رہائشی افراد بغیر کسی جرمانے کے سعودی عرب چھوڑ سکتے ہیں۔

اس اسکیم کی مدت 25 جون کو ختم ہورہی تھی تاہم اس میں مزید ایک ماہ کی توسیع کردی گئی ہے۔

پاسپورٹ آفس جوازات کے مطابق 12 ہزار سے زائد تارکین وطن ایسے ہیں جو رضاکارانہ طور پر ریاست چھوڑ کر جارہے ہیں تاکہ قانونی طور پر ورک ویزا حاصل کرکے دوبارہ سعودیہ عرب واپس آسکیں، ایسے افراد میں کچھ لوگ ایگزٹ ہونے کے صرف ایک ہفتے بعد واپس آجائیں گے۔

ایمنسٹی اسکیم کے قوانین کے تحت غیرقانونی طور پر مقیم ہر وہ غیر ملکی شخص جو اسکیم کی مقررہ مدت میں سعودی عرب چھوڑ جائے گا اس کے فنگر پرنٹس نہیں لیے جائیں گے جس کے بعد وہ قانونی طور پر واپس آنے کا اہل ہوگا اور اسے ورک ویزا یا اقامہ مل سکے گا۔

جوازات پاسپورٹ آفس میں 50 سے زائد کاؤنٹر قائم ہیں جو اس اسکیم کے تحت واپس جانے والے غیر ملکی باشندوں کے ڈپارچر کے عمل میں مصروف ہیں۔

کاؤنٹر پر غیر ملکیوں کو خبردار کیا جارہا ہے کہ وہ اسکیم کے تحت دی گئی مدت کا فائدہ اٹھائیں تاکہ انہیں بلیک لسٹ نہ کیا جائے اور وہ باعزت طریقے سے دوبارہ ریاست میں آسکیں۔

انہیں یہ بھی بتایا جارہا ہے کہ وہ اپنا ڈیپارچر کا عمل مکمل کرنے کے بعد بھی سعودی عرب میں ہی مقیم رہے تو انہیں جیل جانے کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ بھی جوازات کے حکام نے اعلامیہ جاری کیا تھا کہ غیر قانونی مقیم افراد ایمنسٹی اسکیم کے بچے ہوئے دنوں سے فائدہ اٹھائیں اس سے قبل کہ اسکیم ختم ہوجائے۔


سعودی عرب: تنخواہ میں تاخیر پر ہر ملازم کے عوض 3 ہزار ریال جرمانے کا فیصلہ


حکام کے مطابق اسکیم کی مدت ختم ہونے کے بعد غیر ملکی باشندوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کیا جائے گا، سیکیورٹی اداروں کو اس ضمن میں سخت احکامات دے دیے گئے ہیں، مدت ختم ہونے کے بعد پکڑے گئے غیر ملکی باشندوں پر نہ صرف جرمانہ کیا جائے گا بلکہ انہیں جیل بھیجنے، ملک بدر کرنے اور آئندہ مملکت میں آنے پر بلیک لسٹ کرنے جیسی سزائیں دی جائیں گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں