chess سعودی عرب کا شطرنج کے اسرائیلی کھلاڑیوں کو ویزہ دینے سے انکار
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کا شطرنج کے اسرائیلی کھلاڑیوں کو ویزہ دینے سے انکار

 ریاض : سعودی عرب نے شطرنج کے اسرائیلی کھلاڑیوں کو ویزہ دینے سے انکار کردیا، ویزا نہ دینے کی وجہ اسرائیل سے سفارتی تعلقات نہ ہونا ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب میں ہونے والی کنگ سلمان ورلڈ ریپڈ اینڈ بلٹز چیس چیمپیئن شپ میں اسرائیلی کھلاڑی حصہ نہیں لے سکیں گے جس کی وجہ انہیں ویزے نہ ملنا ہیں۔

اس حوالے سے سعودی حکام کا کہنا ہے کہ اسرائیلی کھلاڑیوں کو اس لیے ویزے نہیں دیے جا سکتے کیونکہ ان کے ملک کے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات نہیں ہیں۔

کنگ سلمان ورلڈ ریپڈ اینڈ بلٹز چیس چیمپیئن شپ کے اوپن ایونٹ کے لیے سات لاکھ 50 ہزار ڈالر اور خواتین کے ایونٹ کے لیے ڈھائی لاکھ ڈالر انعامی رقم رکھی گئی ہے

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق سعودی عرب کی جانب سے ویزا نہ ملنے پر اسرائیل چیس فیڈریشن کے عہدیدار نے کہا ہے کہ وہ سعودی حکومت کے اس اقدام پر مالی ہرجانے کا مطالبہ کریں گے۔

اس کے علاوہ دو بار شطرنج کی عالمی چیمپیئن رہنے والی یوکرین کی27سالہ انا میزیچک نے کہا ہے کہ وہ اس ٹورنامنٹ کا بائیکاٹ کریں گی کیونکہ وہ عبایہ نہیں پہننا چاہتیں۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں عوامی مقامات پر خواتین کے لیے عبایہ پہننا لازمی شرط ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر ضرور شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں