The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: پریشانی کا شکار غیرملکی ملازمین کیلئے خوشی کا لمحہ آگیا

ریاض: سعودی عرب میں آجروں کی جانب سے واجب الادا رقم نہ دیے جانے پر مشکلات کا سامنا کرنے والے غیرملکی ورکرز کے لیے اچھی خبر آگئی۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سعودی وزارت افرادی قوت کے ماتحت مصالحتی ادارے نے مقیم غیر ملکیوں کے 30 لاکھ ریال واپس دلائے جو آجروں کی جانب سے واجب الادا تھے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ غیر ملکی تارکین کو مصالحتی عمل کے ذریعے حقوق دلائے گئے، سعودی عرب میں آجروں نے بغیر کسی وجہ سے اجیروں سے معاہدہ ختم کردیا تھا اور اس صورت جو مالیاتی حقوق، الاونس اور واجب الادا تنخواہیں بنتی ہیں وہ بھی نہیں دی گئی تھیں جس کے بعد ایکشن لیا گیا۔

سعودی وزارت افرادی قوت کے ماتحت ادارے مصالحت نے کارکنوں کو تمام مالیاتی حقوق دلادیے۔

خیال رہے کہ وزارت افرادی قوت آجر اور اجیر کے اختلافات نمٹانے کے لیے سب سے پہلے مصالحتی طریقہ کار اختیار کرتی ہے، اس سے قبل بھی کئی مقامی اور غیرملکیوں کو حقوق دلوائے جاچکے ہیں۔

سعودی مصالحتی ادارہ فریقین کا مؤقف سن کر اس کا بغور جائزہ لینے کے بعد فیصلہ سناتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں