سعودی عرب: انسانی حقوق کی دو سرگرم خواتین کارکن گرفتار: Saudi Arab
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: انسانی حقوق کی دو سرگرم خواتین کارکن گرفتار

ریاض: سعودی عرب میں انسانی حقوق باالخصوص خواتین کے لیے آواز اٹھانے والی دو سرگرم خواتین کو گرفتار کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گرفتار ہونے والی دونوں خواتین انسانی حقوق کی معروف کارکن ہیں جو ماضی سے ہی خواتین کے لیے ہر فورم پر آواز اٹھاتی آئی ہیں۔

عالمی میڈیا کے مطابق ہیومن رائٹس واچ (ایچ آر ڈبلیو) نے ان گرفتاریوں کو سماجی کارکنوں کے خلاف ایک غیرمعمولی کریک ڈاؤن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ گرفتاریاں قابل مذمت ہیں۔

ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ صنفی امتیاز کے لیے فعال ایوارڈ یافتہ خاتون کارکن سم بدوی اور ان کی ساتھی خاتون کارکن نسیم الصدا کو اسی ہفتے حراست میں لیا گیا۔


سعودی عرب: ڈانس کرنے کے جرم میں لڑکی گرفتار


قبل ازیں رواں سال مئی سے اب تک عرب سیکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے درجنوں انسانی حقوق کی خواتین کارکن کو گرفتار کیا جاچکا ہے، جو خواتین کے حقوق کی آواز بلند کر رہی تھیں۔

دوسری جانب ریاض حکومت کا ماضی میں ہونے والی گرفتاریوں سے متعلق کہنا تھا کہ گرفتار مذکورہ خواتین کے دشمن ممالک کے ساتھ روابطہ تھے جہاں سے ان کی مالی مدد بھی کی جاتی تھی۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں جاری کریک ڈاؤن میں خواتین کے حقوق کے لیے کام کرنے والی 4 کارکنان کو رواں سال 24 مئی میں گرفتار کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں گرفتار ہونے والی وہ خواتین ہیں جنہوں نے خواتین کو ڈرائیونگ کے حق اور سعودیہ میں نافذ مردوں کی سرپرستی کے نظام کے خاتمے کے لیے مہم چلائی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں