The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کے بینکوں میں رقم جمع کروانے والے ہوشیار!

ریاض: سعودی عرب میں بینک میں رقم جمع کرواتے ہوئے اکاؤنٹ ہولڈر کو بتانا ہوگا کہ رقم کہاں سے حاصل ہوئی۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق پبلک پراسیکیوشن نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ بینک قوانین و ضوابط کے مطابق کھاتے داروں کے لیے یہ بتانا لازمی ہے کہ اکاؤنٹ میں جمع کروائی جانے والی رقم کہاں سے اور کیسے حاصل ہوئی ہے؟

پراسیکیوشن نے وارننگ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر کھاتے دار نے آمدنی کے ذرائع کی نشاندہی میں غلط بیانی سے کام لیا یا غلط معلومات فراہم کیں تو اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔

پبلک پراسیکیوشن کے مطابق منی لانڈرنگ کا جرم ثابت ہوجانے پر 70 لاکھ ریال تک جرمانہ یا 15 برس تک قید یا دونوں سزائیں دی جا سکتی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ منی لانڈرنگ میں استعمال ہونے والی رقم بھی ضبط کرلی جائے گی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں