The news is by your side.

Advertisement

لاپتا ہونے والے سعودی نوجوان کی نعش صحرا سے برآمد

ریاض : سعودی عرب میں الخرج کمشنری کے مضافات سے لاپتہ ہونے والا سعودی نوجوان عبداللہ الدوسری کی نعش الدلم کے صحرا میں ملی ہے، کئی روز سے مقامی حکام تلاش کر رہے تھے۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق غوث نامی آگہی و امدادی سوسائٹی نے بتایا ہے کہ رضا کار لاپتہ نوجوان کی تلاش میں حصہ لے رہے تھے، انہیں پہلے صحرا میں اس کی گاڑی نظر آئی اور پھر ایک رضاکار نے العرمۃ کے علاقے میں اس کی نعش بھی بازیاب کرلی۔

غوث انجمن کا کہنا ہے کہ الخرج پولیس نے بتایا تھا کہ ایک نوجوان الخرج کے مضافات سے لاپتہ ہوگیا ہے، اس کی تلاش میں مدد دی جائے۔

جس کے بعد فوری طور پر ہماری ٹیم پہنچ گئی انجمن کے ایک رضاکار نے لاپتہ عبداللہ الدوسری کا پتہ لگا لیا جو العرمۃ کے صحرا میں مردہ حالت میں پڑا ہوا تھا جبکہ کچھ فاصلے پر اس کی گاڑی موجود تھی جو خراب ہوگئی تھی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل گزشتہ ماہ سعودی عرب کے شہر ریاض میں 4 دن سے لاپتا شہری کی لاش صحرا سے برآمد ہوئی
تھی، ریاض کے علاقے میں وسیع صحرا کے وسط میں ایک 40 سالہ سعودی باشندے کی لاش سجدہ کرنے کی حالت میں برآمد ہوئی ہے۔

یہ شخص گزشتہ چار دن سے لاپتا تھا، جب یہ ملا ہے تو اس کی ہتھیلیاں اور پیشانی ریت میں دھنسی ہوئی تھی  جیسا کہ یہ کافی دیر سے سجدہ کی حالت میں رہا ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں