The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں کاروبار کرنے والے ہوشیار، سخت احکامات جاری

ریاض : سعودی عرب کے شہر خمیس مشیط میں ایک نجی کمپنی نے حکومت کی جانب سے دی جانے والی سہولت "تجارتی پردہ پوشی” کی مہلت سے فائدہ اٹھایا ہے۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق وزارت تجارت نے گزشتہ روز  جاری کیے گئے  ایک بیان میں کہا ہے کہ خمیس مشیط میں ایک کمپنی سات برس سے لائٹنگ کا کاروبار کر رہی تھی، اس کی سالانہ آمدنی دس ملین ریال سے زیادہ تھی۔

وزارت تجارت نے بتایا کہ تجارتی پردہ پوشی کو قانون کے دائرے میں لانے کے لیے مہلت کا فائدہ اٹھاتے ہوئے کمپنی اپنے کاروبار کو قانون کے دائرے میں لا کر قانونی کارروائی سے بچ گئی۔

وزارت تجارت کے بیان میں کہا گیا کہ کمپنی کے غیرملکی مالک نے ایک اور سعودی کے نام سے کمپنی رجسٹرڈ کرائی ہے، اب اس کا کاروبار قانون کے مطابق ہوگیا ہے۔

یاد رہے کہ سعودی عرب میں انسداد تجارتی پردہ پوشی "تسترتجاری” کی اصلاح کے لیے دی جانے والی مہلت کے خاتمے کے بعد مملکت کے مختلف ریجنز میں تفتیشی کارروائیاں جاری ہیں۔ تجارتی پردہ پوشی کے انسداد کے حوالے سے وزارت تجارت نے17 فروری تک مہلت دی گئی تھی۔

گزشتہ برس بھی 6 ماہ کی مہلت دی گئی تھی جس میں مزید اضافہ کرتے ہوئے17 فروری کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے کہا گیا تھا کہ اس دوران تجارتی ادارے کے مالکان اصلاح کرلیں بصورت دیگر ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں