The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : ڈرائیورز ہوجائیں خبردار، دس لاکھ ریال جرمانہ

ریاض : سعودی ٹریفک پولیس کی جانب سے کار اسکریچنگ کرنے والوں کے خلاف گھیرا تنگ کردیا گیا ہے، پولیس اہلکار مختلف علاقوں میں ان نوجوانوں کے خلاف کارروائیاں کررہے ہیں جو کار اسکریچنگ میں ملوث ہیں۔

اس حوالے سے سعودی وزارت داخلہ نے ٹریفک خلاف ورزیوں کی مد میں جاری چالان کے حوالے سے یاد دہانی کراتے ہوئے کہا ہے کہ متعدد بار کار اسکریچنگ کرنے پر جرمانے کی انتہائی حد دس لاکھ ریال تک ہوسکتی ہے۔

مقامی عربی روزنامے نے وزارت داخلہ کی جانب سے مقرر کردہ ٹریفک خلاف ورزیوں کے حوالے سے لکھا ہے کہ کار اسکریچنگ کرنا سنگین ٹریفک خلاف ورزی میں شمار کی جاتی ہے۔

اسکریچنگ پر پہلی بار گرفتار ہونے والے کو20 ہزار ریال کا جرمانہ کیا جاتا ہے جبکہ مسلسل 3 باراسی جرم میں گرفتار ہونے پر جرمانے کی رقم 10 لاکھ ریال تک پہنچ جاتی ہے۔

واضح رہے کہ ٹریفک قوانین کے مطابق کار اسکریچنگ کرنا سخت قانون شکنی ہے جو قابل دست اندازی پولیس جرم مانا جاتا ہے۔

اسکریچنگ کرنے کے الزام میں دوسری بار گرفتاری پر جرمانہ 40 ہزار ریال جبکہ تیسری بار 60 ہزار اور چوتھی بار 10 لاکھ ریال جرمانہ عائد کیا جاتا ہے۔

خیال رہے کہ نوجوانوں میں کار اسکریچنگ کے رجحان کی روک تھام کے لیے سخت قانون سازی کی گئی ہے۔ کار اسکریچنگ کے دوران ماضی میں سنگین حادثات رونما ہو چکے ہیں جس کی وجہ سے متعدد افراد معذوری کی زندگی گزارنے پر مجبورہیں۔

ٹریفک قوانین کی دیگر خلاف ورزیوں میں گاڑی کی مقررہ گنجائش سے زائد افراد کو سوار کرنے پر 900 سے ایک ہزار ریال جرمانہ ہوتا ہے جبکہ نشے کی حالت میں ڈرائیونگ پر 5 ہزار سے 6 ہزار ریال تک کا چالان کیا جاتا ہے۔

اس سے قبل بھی کار اسکریچنگ کرنے والوں کے خلاف شروع کی جانے والی مہم میں متعدد نوجوانوں کو حراست میں لیا گیا جو گاڑی کی نمبر پلیٹ اتار کر اسکریچنگ کرنے کے لیے مخصوص مقام پر جارہے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں