سعودی عرب: جائیداد کا تنازع، حکام نے جائیداد نیلام کردی Saudi Arabia
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: جائیداد کا تنازع، حکام نے جائیداد نیلام کردی

ریاض : سعودی عرب میں عدالتی فیصلے کے باوجود نانا کی وراثت میں بچوں کو ان کی والدہ کا شرعی حصّہ نہ دینے پر حکام نے جائیداد نیلام کردی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کے صوبے ال باحہ میں جائیداد میں والدہ کا حصّہ نہ ملنے پر سعودی شہری اور اس کی بہن نے اپنے ماموں کے خلاف مقدمہ دائر کردیا تھا جس کے باعث خاندان میں وراثت کے معاملے پر تنازع شروع ہوگیا۔

مقامی میڈیا نے بتایا کہ عدالت نے مقدمے کی سماعت کرتے ہوئے فیصلہ اپنی ماں کا حائیداد میں حصّہ مانگنے والے بہن بھائیوں کے حق میں سنایا لیکن والدہ کے بھائیوں کی جانب سے پھر بھی وراثت میں حق نہیں دیا گیا۔

عرب میڈیا کا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلے کے باوجود جائیداد میں حصّہ نہ دئیے جانے پر حکام نے مذکورہ شخص کی تمام جائیداد 40 لاکھ ریال میں نیلام کردی گئی۔

عدالت میں مقدمہ دائر کرنے والے ابراہیم الغامدی نے میڈیا کو بتایا کہ میری والدہ نے 4 سال قبل  والد کی جائیداد میں حصّہ نہ ملنے پر اپنے بھائیوں کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا لیکن ایک برس قبل والدہ کا انتقال ہوگیا تھا۔

ابراہیم الغامدی کا کہنا تھا کہ ’مجھے امید ہے کہ جائیداد کی نیلامی کے بعد ہم اپنی والدہ کا شرعی حق حاصل کرسکیں گے‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں