The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں کرونا وائرس کے مریضوں کا علاج کس طرح کیا جا رہا ہے

ریاض: مملکت سعودی عربیہ میں کرونا وائرس کے انفیکشن کا علاج کیسے کیا جا رہا ہے، اس سلسلے میں وزارت صحت نے تفصیلات بیان کر دیں۔

سعودی میڈیا کے مطابق وزارت صحت نے کرونا وائرس کے علاج کے لیے اینٹی بائیوٹک کے استعمال پر واضح مؤقف اختیار کیا ہے، اس سلسلے میں سعودی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی نے پھر کہا کہ کرونا وائرس کا علاج اینٹی بائیوٹک نہیں ہے۔

گزشتہ روز سعودی دارالحکومت میں معمول کی بریفنگ میں ترجمان نے بتایا کہ کرونا کے مریضوں کو اس قسم کی ادویہ دی جا رہی ہیں جو وائرس کو قابو کرنے کی خصوصیات رکھتی ہیں، جو وائرس کے خلاف جسمانی مزاحمتی نظام کو مضبوط بناتی ہیں۔

کرونا وائرس بحران: سعودی وزیر خزانہ کا اہم اعلان

ترجمان کے مطابق اینٹی بائیوٹک کا استعمال ان مریضوں پر کیا جا رہا ہے جو کرونا کے ساتھ ساتھ دیگر امراض میں بھی مبتلا ہیں، اینٹی بائیوٹک کرونا انفیکشن کا بنیادی علاج نہیں ہے، کرونا انفیکشن کے لیے متعدد دواؤں کا مجموعہ استعمال کیا جا رہا ہے۔

ڈاکٹر محمد العبد العالی کا کہنا تھا کہ جب بھی کرونا وائرس کی مخصوص دوائیں تیار ہوں گی ان سے استفادہ کیا جائے گا، اس کے لیے ویکسین جب اور جہاں تیار ہوگی، سعودی عرب اسے سب سے پہلے حاصل کرنے والے ممالک میں شامل ہوگا۔

ترجمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ مملکت کے کئی قومی تحقیقاتی مراکز کرونا ویکسین کی تیاری سے متعلق عالمی مہم میں شریک ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں