The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : تمام غیرملکیوں کیلئے خصوصی ہدایت جاری

کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کے باعث دنیا بھر میں سفر کرنا بھی انتہائی دشوار ہوچکا ہے، حکومتوں کی جانب سے ملک میں آنے اور جانے والوں کیلئے سخت شرائط عائد کی گئی ہیں۔

اس حوالے سے ترجمان سعودی وزارت صحت نے کورونا سے بچاؤ کے لیے ویکسی نیشن کو لازمی قرار دیا ہے، مملکت میں کورونا سے بچاؤ کے لیے لگائی جانے والی ویکسینز میں فائزر بائیو این ٹیک، اسٹرا زینیکا، جانسن اینڈ جانسن اور موڈرنا شامل ہیں جبکہ سائینو ویک اور سائنو فام کو بھی منظور کیا گیا ہے۔

ویکسی نینشن کے حوالے سے اسٹیٹس اپ ڈیٹ کے لیے وزارت صحت کی ایپس”توکلنا” اور”صحتی” موجود ہیں جن پر ویکسی نیشن کے بارے میں معلومات اپ لوڈ کی جاتی ہیں۔

توکلنا ایپ کے حوالے سے ایک شخص نے دریافت کیا ہے کہ پاکستان میں توکلنا ایپ کام نہیں کررہی، کیا کریں ؟ وزارت صحت کا کہنا ہے کہ توکلنا ایپ مخصوص ممالک میں ہی کام کرتی ہے جن میں پاکستان شامل نہیں ہے۔

اس حوالے سے توکلنا ایپ کو پاکستان میں لاگ ان کرنے کی ضرورت نہیں۔ وزارت کی دوسری ایپ ’صحتی‘ پاکستان سمیت متعدد ممالک میں کام کرتی ہے۔ اسے انسٹال کرکے اکاونٹ اپ ڈیٹ کیا جائے۔

ایک شخص نے استفسار کیا ہے کہ کورونا کے ماحول میں پاکستان سے سعودی عرب آنے کے لیے کیا شرائط ہیں، سعودی محکمہ پاسپورٹ کے قانون کے مطابق ایسے اقامہ ہولڈرز جو مملکت سے باہر ہیں ان کےلیے ضروری ہے کہ انہوں نے مملکت سے روانگی سے قبل کورونا سے بچاو کے لیے ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوائی ہوئی ہوں۔

ایسے تارکین جنہوں نے ویکسین کی دونوں خوراکیں لگائی ہیں انہیں براہ راست مملکت آنے کی اجازت ہے۔ ایسے افراد کو سعودی عرب آنے سے کم از کم 72 گھنٹے قبل پی سی آر ٹیسٹ کرانا ہوگا جس کی منفی رپورٹ آنے پرہی انہیں سعودی عرب آنے کی اجازت ہوگی۔

تاہم وہ تارکین جنہوں نے مملکت میں ایک ہی ویکسین لگوائی ہے یا اپنے ملک میں کورونا سے بچاو کےلیے عالمی ادارہ صحت کی منظور شدہ ویکسین لگوائی ہو وہ سعودی عرب آنے کےبعد 5 دن قرنطینہ میں گزاریں گے جس کے بعد ان کا پی سی آر ٹیسٹ منفی آنے پرقرنطینہ کی پابندی ختم کی جائے گی۔

علاوہ ازیں سعودی عرب آنے سے قبل تمام اقامہ ہولڈرز کے لیے لازمی ہے کہ وہ وزارت داخلہ کے پورٹل ’قدوم‘ پراپنا اندراج کرائیں جس میں ویکسین کے بارے میں معلومات اپ لوڈ کرنا ہوں گی۔
ایسے افراد جنہوں نے سعودی عرب میں ویکسین نہیں لگائی ہوگی انہیں مملکت میں لگائی جانے والی ویکسین کی بوسٹرڈوز لینا ہوگی جو ان کے مملکت آنے کے بعد لگائی جائے گی۔

خیال رہے سعودی عرب میں حکومت کی جانب سے کورونا سے بچاو کےلیے سعودی شہریوں اورمقیمین کومفت کورونا ویکسین کا کورس کرایا جارہا ہے تاکہ اس وبا کو پھیلنے سے روکا جاسکے اور جلد ازجلد اس پر قابو پایا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں