The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: ثبوت مٹانے کے لیے اسمگلر نے گاڑی کو آگ لگا دی

ریاض: سعودی عرب میں منشیات اسمگلنگ کی بڑی کارروائی ناکام بناتے ہوئے لاکھوں نشہ آور گولیاں ضبط کرلی گئیں، ایک اسمگلر نے ثبوت مٹانے کے لیے گاڑی کو آگ لگا دی۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی محکمہ کسٹم نے بری سرحدی چوکیوں سے منشیات اسمگل کرنے کی 3 بڑی کوششیں ناکام بناتے ہوئے 9 لاکھ سے زائد نشہ آور گولیاں ضبط کرلیں۔

ایک اسمگلرنے گرفتا ی سے بچنے کے لیے گاڑی کو ہی آگ لگا دی تاکہ منشیات اسمگلنگ کے ثبوت کو مٹایا جا سکے۔

کسٹم اتھارٹی کی جانب سے جاری ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ اہلکار کس طرح منشیات اسمگل کرنے کی کوششوں کو ناکام بنا رہے ہیں۔

الخفجی چیک پوسٹ پر گزشتہ دنوں نشہ آور گولیاں اسمگل کرنے کی تین بڑی کارروائیوں کو اہلکاروں نے ناکام بنایا جن میں انتہائی مہارت سے اسمگلروں نے منشیات اپنی گاڑیوں میں چھپائی تھیں۔

کسٹم اتھارٹی کا کہنا ہے کہ چیک پوسٹ پر متعین اہلکاروں کو تلاشی لیتے دیکھ کر اسمگلر نے ثبوت مٹانے کے لیے گاڑی کو ہی نذر آتش کردیا تاہم اہلکاروں نے بروقت گاڑی کی آگ پر قابو پانے کے بعد اس میں چھپائی گئی نشہ آورگولیاں برآمد کرلیں جن کی تعداد 2 لاکھ 8 ہزار سے زائد تھی۔

اسمگلنگ کی دوسری کارروائی میں سرحدی چیک پوسٹ پر متعین اہلکاروں نے ایک گاڑی کی اسٹبنی میں چھپائی گئی نشہ آور گولیاں برآمد کرلیں جن کی تعداد 3 لاکھ 46 ہزار سے زائد تھی۔

تیسری کارروائی میں 4 لاکھ سے زائد نشہ آور گولیاں ضبط کی گئیں جو گاڑی کے پیٹرول ٹینک کے نیچے چھپائی گئی تھیں، اسمگلر نے کسٹم اہلکاروں سے بچنے کے لیے اپنی اہلیہ کو بھی ساتھ رکھا تھا مگر اہلکاروں کی تفتیش سے بچ نہ سکا۔

کسٹم اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ضبط کی جانے والی نشہ آور گولیاں متعلقہ ادارے کے سپرد کردی گئیں جبکہ اسمگلروں کے خلاف مقدمہ درج کر کے انہیں عدالتی کارروائی کے لیے ادارہ پراسیکیوشن کے حوالے کردیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں