The news is by your side.

سعودی عرب: تفریحی مراکز میں 7 پیشے سعودائزیشن سے مستثنیٰ قرار

سعودی عرب میں پلے لینڈ اور عائلی تفریحی مراکز میں سعودائزیشن کے قانون پر اتوار سے عملدرآمد شروع ہوگیا جس میں 7 پیشوں پر استثنیٰ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

سعودی میڈیا رپورٹ کے مطابق وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود آبادی نے تفریحی مراکز میں جن 7 پیشوں کو سعودائزیشن سے استثنیٰ دینے کا اعلان کیا ہے ان میں صفائی کے کارکنوں کو لانے اور لے جانے والی بسوں کے ڈرائیور، لوڈنگ اور آف لوڈنگ کے کارکن، باربر، پلمبر اور الیکٹرانک جھولے چلانے والے ماہر اور تربیت یافتہ آپریٹرز شامل ہیں۔

مذکورہ سات پیشوں کے علاوہ دیگر تمام پیشوں میں سعودائزیشن کولازمی قرار دیا گیا ہے۔

رپورٹ میں وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود آبادی کے حوالے سے بتایا کہ مستقل اور عارضی بنیادوں پر قائم تفریحی پارکس اور بچوں کے پلے لینڈز میں سعودائزیشن کولازمی قراردیتے ہوئے 25 ستمبر کی ڈیڈ لائن دی گئی تھی، ڈیڈ لائن ختم ہونےکے بعد تفریحی پارکوں اور پلے لینڈز میں تفتیشی عمل کا آغاز اور قانون پر عمل درآمد نہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

وزارت افرادی قوت کی جانب سے کہا گیا تھا کہ وہ پلے لینڈز جو مالز کے اندر بنائے گئے ہیں وہاں سعودائزیشن 100 فیصد ہوگی جبکہ فیملی پارکوں میں 70 فیصد کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں