The news is by your side.

Advertisement

سعودی حکومت نے نجی اداروں کے ملازمین کا بڑا مسئلہ حل کردیا

ریاض : سعودی حکومت نے مملکت میں مقیم ایسے ملازمین جو نجی اداروں میں ملازمت کرتے ہیں ان کا دیرینہ مسئلہ حل کر کے انہیں پریشانی سے نجات دلادی۔

سعودی وزارت افرادی قوت وسماجی بہبود کی کمیٹی نے 60 کارکنوں کے مقدمات نمٹاتے ہوئے انہیں 9 لاکھ ریال ادا کرا دیئے، لیبر کورٹ میں کارکنوں نے اجتماعی مقدمات دائر کیے تھے۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق ریاض ریجن میں 3 تجارتی و صنعتی اداروں کے 60 ملازمین نے اپنے حقوق و واجبات کے حصول کے لیے  وزارت افرادی قوت وسماجی بہبود آبادی کے ریجنل آفس سے رجوع کیا تھا۔

کارکنوں کا دعویٰ تھا کہ انہیں اداروں کی جانب سے تنخواہیں اور دیگر واجبات ادا نہیں کیے گئے جن تین اداروں کے ملازمین نے وزارت افرادی قوت سے رجوع کیا تھا ان میں تعمیرات ، ہوٹل اور فیکٹری کے کارکن شامل تھے۔

وزارت افرادی قوت کی کمیٹی نے تمام کیسز کا بغور جائزہ لینے کے بعد انہیں حل کردیا، بعض کارکنوں کو تنخواہوں اور واجبات کی ادائیگی کرائی گئی جبکہ بعض جو مستقل طورپر وطن جانا چاہتے تھے ان کے واجبات ادا کرائے گئے، واجبات کی ادائیگی کی مد میں 9 لاکھ ریال ادا کرائے گئے۔

واضح رہے کہ وزارت افرادی قوت وسماجی بہبود آبادی کی جانب سے مملکت میں آجر و اجیر کے مابین تنازعات ختم کرنے کے لیے مصالحتی کمیٹیاں قائم کی جاتی ہیں تاکہ اختلافات کو حل کیا جاسکے۔

مصالحتی کمیٹی جسے لیبر کورٹ بھی کہا جاتا ہے میں تنخواہوں میں تاخیر، واجبات کی عدم ادائیگی سمیت مختلف قسم کے تنازعات کے نمٹائے جاتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں