The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: ‘6 ماہ بعد ملک بدر کردیا جائے گا’ تارکین وطن خبردار!

ریاض: سعودی حکومت نے غیرقانونی کاروبار کرنے والے تارکین وطن کو خبردار کیا ہے کہ پکڑے جانے پر 6 ماہ قید کی سزا ہوگی اور پھر ملک بدر کردیا جائے گا۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سعودی محکمہ امیگریشن اینڈ پاسپورٹ(جوازات) کی جانب سے مملکت میں مقیم غیرملکیوں کو متنبہ کیا گیا ہے کہ غیر قانونی کاروبار کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔

محکمہ نے انتباہ جاری کیا کہ سعودی عرب میں مقیم ایسے تارکین وطن جو غیر قانونی طور پر اپنا ذاتی کام کرتے ہیں قانونی طور پرجرم ہیں، ان کے خلاف ایکشن ہوگا۔

جوازات نے اس جرم کی سزا 50 ہزار ریال جرمانہ، 6 ماہ قید اور ڈی پورٹ بتائی ہے۔

سعودی محکمہ پاسپورٹ نے یہ پیغام مختلف زبانوں میں جاری کیا تاکہ غیرملکی سمجھ سکیں اور سعودیوں کے ناموں سے ذاتی کام کرتے ہیں وہ اس نوعیت کی سرگرمیوں سے باز آجائیں۔

خیال رہے کہ مملکت میں غیر ملکیوں کے لیے قانونی طور پر ذاتی کاروبار کرنا منع ہے، وہ تارکین وطن جو سعودی عرب میں تجارت کرنے کے خواہاں ہیں ان کے لیے باقاعدہ سرمایہ کاری کا لائسنس حاصل کرنا ہوتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں