The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں ناجائز منافع خوروں کیخلاف سخت کارروائی

ریاض : سعودی حکومت نے ناجائز منافع خوروں کو تنبیہ کی ہے کہ اشیائے ضروریہ کے نرخوں میں گھپلے کیے گئے تو دس لاکھ ریال تک جرمانہ ادا کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق سعودی وزارت تجارت کے ترجمان عبدالرحمن الحسین نے تمام تاجروں اور دکانداروں کو خبردار کیا ہے کہ اشیائے ضرورت کے نرخوں میں گھپلے کرنے پر دس لاکھ ریال تک جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ یہ بات انہوں نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق تفتیشی ٹیموں نے ملک بھر میں23 ہزار چھاپے مارے اس دوران نرخ ناموں کی تیرہ سو خلاف ورزیاں ریکارڈ کی ہیں۔

وزارت تجارت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ حفاظتی ماسک کی قلت کی شکایات کم ہوئی ہیں تاہم مقامی مارکیٹ میں سنترے لیموں اور اس جیسی اشیا کی قلت ہے طلب زیادہ ہے، جلد یہ کمی پوری کردی جائے گی، وزارت تجارت کے ترجمان کے مطابق مقامی شہری اور مقیم غیر ملکی ای ایپلی کیشن کے ذریعے گھروں میں مطلوبہ اشیا طلب کرسکتے ہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ بعض پھلوں کے نرخ بڑھ گئے ہیں جو جلد کنٹرول کرلیے جائیں گے، کھانے پینے کی اشیاء اور ضرورت کے سامان کی کڑی نگرانی کی جارہی ہے، بیکریوں گوشت سبزی کی دکانوں پٹرول پمپوں اور سامان کے گوداموں پر مسلسل چھاپے مارے جارہے ہیں۔

وزارت تجارت نے صارفین سے اپیل کی ہے کہ اگر کہیں وہ سامان کے نرخ حد سے زیادہ بڑھتے ہوئے پائیں تو فوری طور پر(بلاغ تجاری) یا 1900 پر رابطہ کرکے یا وزارت تجارت کی سرکاری ویب سائٹ سے رجوع کرکے مطلع کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں