The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب نے اقامہ ہولڈرز کو خوشخبری سنادی

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی ہدایت پر محکمہ پاسپورٹ نے بیرون مملکت پھنسے ہوئے مقیم غیرملکیوں کے اقاموں اورخروج وعودہ ویزوں (ایگزٹ ری انٹری) میں31 مارچ تک توسیع کی کارروائی شروع کی ہے۔

شاہی ہدایت پر یہ توسیع مقابل مالی اور فیس کے بغیر کی جارہی ہے۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے کے مطابق محکمہ پاسپورٹ نے بیان میں کہا کہ ’اقاموں اور خروج و عودہ ویزوں میں توسیع خودکار سسٹم کے تحت ہوگی اور یہ کام نیشنل انفارمیشن سینٹر کے تعاون سے کیا جائے گا۔

غیرملکیوں یا ان کے سپانسرز کو محکمہ پاسپورٹ کے دفاتر آنا ہوگا نہ بیرون مملکت سعودی سفارتخانوں یا قونصلیٹ سے رجوع کرنا ہوگا۔

بیان میں محکمہ پاسپورٹ نے بتایا کہ بیرون مملکت موجود ان مقیم غیرملکیوں کے اقاموں اور خروج و عودہ ویزوں میں توسیع ہوگی جو ایسے ممالک میں قیام پذیر ہوں گے جہاں سے کورونا وبا کے باعث مملکت آمد پر پابندی لگی ہوئی ہے۔

اس توسیع سے وہ مقیم غیرملکی مستثنی ہوں گے جو مملکت سے نکلنے سے قبل یہاں کورونا ویکسین کی ایک خوراک لے چکے ہوں گے۔

محکمہ پاسپورٹ کے مطابق ’بیرون مملکت ان وزیٹرز کے وزٹ ویزوں میں توسیع ہوگی جن کے ویزے وزارت خارجہ سے جاری کیے گئے ہوں اور ان کا تعلق ان ممالک سے ہو جہاں سے کورونا وبا کے باعث مملکت آمد پر پابندی ہے۔ ان کے ویزوں میں توسیع بھی31 مارچ 2022 تک ہوگی۔

یاد رہے کہ اقاموں، خروج و عودہ اور وزٹ ویزوں میں توسیع کا فیصلہ بین الاقوامی وبا کے منفی اثرات سے نمٹنے کی مملکت کی کوششوں کا حصہ ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں