The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کا سب سے بڑی عمارت تعمیر کرنے کا فیصلہ

ریاض: سعودی عرب نے نیوم شہر میں دنیا کی سب سے بڑی عمارت تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق منصوبے کے تحت دو عمارتیں بنائی جائیں گی جو 500 میٹر بلند ہوگی جبکہ چوڑائی میں کئی میل پر پھیلی ہوئی ہوگی، عمارتوں میں رہائشی، کمرشل اور دفتری بلاکس بنائے جائیں گے۔

یہ عمارتیں بحیرہ احمر کے ساحل سے صحرا کی جانب تعمیر کی جائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں: سعودی عرب کے جدید ترین شہر نیوم میں نیا منصوبہ

خیال رہے کہ نیوم منصوبے کا اعلان 2017 میں سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کیا تھا جو کہ سعودی معیشت کا انحصار تیل سے کم کر کے مختلف شعبوں تک پھیلانا چاہتے ہیں۔ نیوم منصوبہ سعودی فرمانروا شاہ سلمان کے وژن 2030 کا حصہ ہے۔

سعودی ولی عہد نے منصوبے کے اعلان میں نیوم کے ساتھ ‘دی لائن’ منصوبے کا بھی اعلان کیا تھا جس کے تحت صحرا میں ایک افقی شہر بسایا جائے گا جو کہ 170 کلومیٹر لمبا ہو گا۔

اس شہر کو گاڑیوں سے پاک رکھا جائے گا اور شہر کو ملانے اور سامان کی ترسیل کے لئے زیر زمین ٹرین لائن بچھائی جائے گی اور شہر میں سڑکوں پر ٹریفک کو آنے کی کسی صورت اجازت نہیں ہو گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں