The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب نے حج سے متعلق ایس او پیز جاری کر دیے

ریاض: سعودی عرب نے حج سے متعلق ایس او پیز جاری کر دیے، 28 ذی القعد سے 12 ذی الحج تک منی، مزدلفہ، عرفات میں بغیر اجازت جانے پر پابندی ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت نے حج سے متعلق ایس او پیز جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ 28 ذی القعد سے 12 ذی الحج تک منی، مزدلفہ، عرفات میں بغیر اجازت جانا منع ہوگا۔

خدمت پر مامور جن کارکنان پر کرونا وائرس سے متاثر ہونے کا شبہ ہوگا ان کو کام کی اجازت نہیں ہوگی، حاجیوں اور کارکنان کے لیے ماسک پہننا لازمی ہوگا، طواف اور سعی کے دوران سماجی فاصلوں کی پابندی کی جائے گی۔

ایس او پیز کے مطابق اجتماعی نمازوں میں بھی ماسک اور ڈیڑھ میٹر کا فاصلہ بھی لازمی قرار دیا گیا ہے، حاجیوں کے لیے خانہ کعبہ اور حجر اسود کو بوسہ دینے پر پابندی عائد ہوگی۔

عازمین حج کو رقوم کی واپسی کا آغاز

شیاطین کو مارنے کے لیے پیک شدہ کنکریاں فراہم کی جائیں گی، عرفات اور مزدلفہ میں بھی پیک شدہ کھانے کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔

یاد رہے کہ 23 جون کو سعودی وزارتِ حج نے کرونا وائرس کی وبا کے پیش نظر ملک میں موجود شہریوں کے لیے محدود پیمانے پر حج کی اجازت دی تھی، اور کہا تھا کہ رواں سال مملکت سے باہر سے کوئی حج کی سعادت کے لیے نہیں آ سکے گا، خیال رہے کہ ہر سال تقریباً 25 لاکھ کے قریب افراد حج کی سعادت حاصل کرنے مختلف ممالک سے سعودی عرب جاتے ہیں تاہم کرونا وبا کی وجہ سے رواں سال یہ ممکن نہیں ہو سکے گا۔

پاکستان نے بھی کرونا وبا کے باعث محدود پیمانے پر حج سے متعلق سعودی عرب کے فیصلے کا خیر مقدم کیا تھا، وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نور الحق قادری نے کہا تھا کہ سعودی فیصلہ شریعت کے حکم اور موجودہ حالات کے عین مطابق ہے۔ پاکستان میں عازمین حج کی رقوم کی واپسی کا سلسلہ بھی شروع کیا جا چکا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں