The news is by your side.

Advertisement

طبی غلطیوں پر عملے کے لیے ضوابط جاری

ریاض: سعودی سینٹرل بینک نے طبی غلطیوں پر بیمہ پالیسی کا لائحہ عمل جاری کردیا ہے، طبی عملے کے لیے بیمہ پالیسی کا نفاذ آئندہ برس سے کیا جائے گا۔

سعودی مرکزی بینک ساما نے طبی عملے سے ہونے والی غلطیوں کے تدارک کے لیے بیمہ پالیسی متعارف کرتے ہوئے ضوابط کا اعلان کردیا۔

پالیسی کے حوالے سے ساما کا کہنا ہے کہ انشورنس پالیسی کا قانون تمام ڈاکٹروں جن میں ڈینٹیسٹ بھی شامل ہیں پر لاگو ہوگا، بیمہ پالیسی کا نفاذ آئندہ برس یکم جنوری 2022 سے کیا جائے گا۔

پالیسی کا مقصد طبی غلطی ہونے کی صورت میں طبی عملے کو بیمے کی سہولت فراہم کرنا ہے، طبی غلطی سے ہونے والے مشکل صورتحال میں بیمہ پالیسی طبی عملے کی جانب سے معاوضہ ادا کرنے کی پابند ہوگی۔

مرکزی بینک کی جانب سے جاری ضوابط میں کہا گیا ہے کہ طبی غلطی کے باعث مریض کی موت واقع ہونے یا جسمانی و ذہنی معذوری و دیگر نوعیت کی مشکلات پیش آنے پر بیمہ پالیسی کارگر ہوگی۔

جاری کردہ ضوابط کی شق نمبر 13 میں کہا گیا ہے کہ طبی غلطی ہونے پر عدالتی حکم کی روشنی میں بیمہ کمپنی معاوضہ ادا کرنے کی پابند ہوگی، مقررہ نکات کے مطابق بیرون مملکت دائر کیا گیا دعویٰ بیمہ پالیسی پر اثر انداز نہیں ہوگا۔

بیمہ پالیسی کی کوریج کی حد مختلف مقرر کی گئی ہیں جن میں سالانہ 1 لاکھ ریال سے 5 لاکھ ریال تک انشورنس کلیم کی مد میں مختص کیے گئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں