The news is by your side.

سعودی عرب: 18 مزید سہولتوں کے ساتھ نئی میڈیکل انشورنس اسکیم کا اعلان

ریاض: سعودی عرب میں نئی میڈیکل انشورنس اسکیم کا اعلان کردیا گیا جس کا اطلاق یکم اکتوبر سے ہوگا۔

سعودی گزٹ کے مطابق سعودی ہیلتھ انشورنس کونسل یکم اکتوبر 2022 سے نئی میڈیکل انشورنس اسکیم کا آغاز کر رہی ہے۔

میڈیکل انشورنس اسکیم میں مزید 18 سہولتوں کا اضافہ ہوگا جبکہ پہلے سے موجود 10 سہولتوں کو بہتر بنایا جائے گا۔

ہیلتھ انشورنس کونسل کے ترجمان ناصر الجہنی نے بتایا کہ ویکسین اور ممکنہ امراض کے پیشگی ٹیسٹ کے حوالے سے متعدد سہولتیں میڈیکل انشورنس پروگرام میں شامل ہیں، خواتین کی صحت پر خصوصی توجہ ہوگی۔ حد سے زیادہ موٹاپے کے آپریشن اور گردے کی پیوند کاری بھی میڈیکل انشورنس پروگرام کا حصہ ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ میڈیکل انشورنس پروگرام میں ذہنی صحت اور اس کا علاج شامل ہوگا، لاعلاج اور شدید قسم کے ذہنی امراض سے متعلق کوریج کا دائرہ 15 ہزار سے بڑھا کر 50 ہزار ریال تک ہوگا۔

نئی اسکیم میں گردے کی صفائی سمیت دیگر سہولتوں کی کوریج کی حد بھی بڑھا دی گئی ہے۔

ڈاکٹر ناصر کے مطابق میڈیکل انشورنس پروگرام میں نئی سہولتوں کے اضافے کے بعد مستقبل قریب میں میڈیکل انشورنس اسکیم فیس میں معمولی سا اضافہ ہوگا۔

نئی سہولتیں لازمی میڈیکل انشورنس اسکیموں میں ان تمام زمروں کے لیے ہیں جنہیں میڈیکل انشورنس کروانا ضروری ہے، علاوہ ازیں پرائیوٹ سیکٹر کے ملازمین اور ان کے رشتے داروں کی میڈیکل انشورنس اسکیموں میں بھی نئی سہولتوں کا اضافہ ہوگا۔

انہوں نے بتایا کہ ذیابیطس، بلڈ پریشر، دل کے امراض اور موٹاپے جیسی 5 بیماریاں شامل ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ نئی میڈیکل انشورنس اسکیم میں عصری تقاضوں کو پورا کرنے پر زور دیا گیا ہے، اب کم لاگت والی ادویات صحت خدمات کے حوالے سے بنیادی ضرورت بن گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں