The news is by your side.

Advertisement

ایتھوپیا ڈیم تنازع سے متعلق سعودی عرب کا اہم اعلان

ریاض: سعودی عرب نے دریائے نیل پر قائم ڈیم منصوبے پر کشیدگی میں اضافے کے بعد مصر اور سوڈان کی حمایت کا اعلان کردیا۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ مصر سوڈان اور افریقی براعظم کے لیے پانی کی سیکیورٹی مستحکم کرنا ضروری ہے۔

سعودی عرب کا کہنا ہے کہ اس نے بین الاقوامی قانون کے قواعد کے مطابق بحران پر قابو پانے کے لیے مصر اور سوڈان کی کوششوں اور ان کے مطالبات کی بھی حمایت کی ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کا یہ بیان مصر کے وزیر آبپاشی کے بیان کے ایک روز بعد سامنے آیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ انہیں ایتھوپیا کی جانب سے نوٹس موصول ہوا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اس نے دوسری بار گرینڈ ریناسانس ڈیم کے ذخائر کو بھرنا شروع کردیا ہے جسے قاہرہ نے مسترد کردیا ہے۔

سعودی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ اس نے بین الاقوامی اقدامات کی حمایت کی ہے جس کا مقصد تنازع کے خاتمے کا ایک لازمی حل تلاش کرنا ہے۔

وزارت خارجہ نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اس بحران سے نکلنے کے لیے تینوں ممالک کے مابین مذاکرات شروع کرنے کے لیے واضح طریقہ کار تلاش کرنے کی کوششوں کو تیز کرے۔

یاد رہے کہ عرب ریاستوں نے 15 رکنی باڈی سے اس مسئلے کو حل کرنے کی درخواست کی ہے جس کے بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس منعقد ہوگا۔

ایتھوپیا نے اپنی ملک ترقی کو اس ڈیم سے منسلک کیا ہے اور حکومت کا ماننا ہے کہ یہ لاکھوں افراد کو غربت سے نکالنے میں مددگار ثابت ہو گا۔

دوسری جانب مصر میں 90 فیصد پانی کی سپلائی کا انحصار دریائے نیل پر ہے۔

سوڈان میں بھی پانی کی سپلائی کا انحصار دریائے نیل پر ہے جس کی وجہ سے وہاں کی حکومت نے تینوں ممالک کے درمیان مذاکرات کی بحالی میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں