The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : ذاتی کاروبار کرنے کا قانونی طریقہ کار کیا ہے؟

ریاض : سعودی وزارت تجارت نے کہا ہے کہ مکہ مکرمہ میں ایک کمپنی خود کو قانون کے دائرے میں لے آئی ہے۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق وزارت تجارت نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ سعودی حکومت نے مملکت بھر میں تجارتی پردہ پوشی میں ملوث سعودیوں اور مقیم غیرملکیوں کو اصلاح حال کی مہلت دی تھی اور انہیں قانونی دائرے میں آنے کے لیے متعدد آپشنز دیے گئے تھے۔

سعودی قانون کے بموجب کوئی بھی غیرملکی اس بات کا مجاز نہیں کہ وہ سعودی کے نام سے کاروبار کرے اور کسی بھی سعودی کو اس بات کی اجازت نہیں کہ وہ اپنے نام سے کسی غیرملکی کو کاروبار کرائے۔ یہ عمل تجارتی پردہ پوشی کہلاتا ہے جو قانونی طور پر جرم ہے۔

وزارت تجارت نے بتایا کہ آسائشی اشیاء کے کاروبار کی ایک کمپنی نے مہلت کے دوران اصلاح حال کی درخواست دی تھی، اس پر کارروائی اب مکمل ہوچکی ہے۔

وزارت تجارت نے بتایا کہ کمپنی آسائشی اشیاء کے کاروبارمیں 35 برس سے کام کر رہی تھی، سالانہ آمدنی سو ملین ریال سے زیادہ کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں