The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: خواتین کے ڈرائیونگ سے متعلق تمام تیاریاں مکمل کر لی گئیں

ریاض: سعودی وزیر داخلہ کے معاون سعید بن عبداللہ نے کہا ہے کہ سعودی عرب میں خواتین کے گاڑی چلانے کے حوالے سے تمام امور اور تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں جبکہ خواتین رواں سال 24 جون سے گاڑیاں چلاسکیں گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹریفک سے متعلق ایک خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، معاون سعید بن عبداللہ کا کہنا تھا کہ جس طرح مرد ٹریفک قوانین کی پاسداری کرتے ہیں اسی طرح خواتین کو بھی کرنا ہوگی، یہ نوبت ہی نہیں آئے گی کہ اس حوالے سے سخت کارروائی کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ اللہ نے چاہا تو خواتین کی جانب سے ٹریفک کی خلاف ورزیاں نہیں ہوں گی، امید ہے کہ خواتین کی ڈرائیونگ زیادہ سلامتی کی حامل اور محفوظ ہوگی اور اس حوالے سے شاذ و نادر ہی کسی حراست کی نوبت آئے گی، لیکن اگر ایسی صورت حال ہوئی تو قانون کے مطابق فیصلے ہوں گے۔


سعودی عرب: غیرملکی ڈرائیونگ لائسنس رکھنے والی خواتین ڈرائیورز کے لیے اہم فیصلہ


سعید بن عبداللہ کا کہنا تھا کہ سعودی وزیر داخلہ شہزادہ عبد العزیز بن سعود ٹریفک سیکیورٹی کو جدید طرز پر بنا رہے ہیں، تاکہ سڑک پر گاڑیاں چلانے میں کسی قسم کی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے، اس سلسلے میں شاہی فرمان کے مطابق مزید بھی اقدامات کریں گے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ خواتین کو ہر شعبوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا چاہیے تاکہ مملکت کی ترقی میں ان کا بھی واضح کردار ہو، سڑک پر گاڑیاں چلاتی خواتین کی عزت کرنا ہم پر لازم ہے، ایسے فیصلے سعودی عرب کے لیے انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔


جرمنی میں خواتین ڈرائیور کے نقاب پر پابندی برقرار


خیال رہے کہ سعودی حکومت کی جانب سے خواتین ڈرائیورز کے لیے  بھرپور اقدامات کیے جارہے ہیں، غیر مملکی ڈرائیونگ لائسنس کی حامل خواتین کے لیے بھی آسان اور سہل طریقہ متعارف کرایا گیا ہے تاکہ وہ اپنے ڈرائیونگ لائسنس کو سعودی عرب کے ڈرائیونگ لائسنس میں تبدیل کراسکیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں