The news is by your side.

Advertisement

ملک کی مشکل معاشی صورتحال میں سعودی عرب ایک بار پھر اہم کردار ادا کرنے کو تیار

اسلام آباد: ڈالر کی ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے لیے بری خبر آگئی، پاکستان کی مشکل معاشی صورتحال میں سعودی عرب ایک بار پھر اہم کردار ادا کرنے کو تیار ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان اورسعودی عرب کے درمیان اعلیٰ سطح کے رابطے ہوئے ہیں جس کے بعد سعودی عرب سے پاکستان کو ادھار تیل کی ترسیل شروع ہونے کا امکان ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی عرب پاکستان کو 3 ارب ڈالر مالیت تک کا تیل ادھار پر دے گا۔ دونوں ممالک کے درمیان ادھار تیل کی ادائیگی کا معاہدہ پہلے ہی ہوچکا ہے۔ ادھار تیل ملنے سے روپے کی قدر میں استحکام اور ڈالر کی قدر میں کمی آئے گی۔

ذرائع کے مطابق تیل کی بڑھتی قیمتوں کے باعث درآمدی بل میں غیر معمولی اضافہ ہوا، رواں مالی سال پاکستان 10 ارب ڈالر کا تیل درآمد کر چکا ہے۔ اس ضمن میں وزیر اعظم عمران خان کو اہم پیشرفت سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ کچھ دن میں ڈالر کی قیمت کو پر لگ گئے ہیں جس کے بعد لوگوں نے ڈالر خرید کر رکھنا شروع کردیا، ڈالر کی اس ذخیرہ اندوزی کے بعد ڈالر کی قیمت میں مزید اضافہ ہورہا ہے جس کے بعد ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح 153 روپے پر پہنچ گیا۔

اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان نے گزشتہ برس اکتوبر میں سعودی عرب کا دورہ کیا تھا جہاں پاکستان نے 12 ارب ڈالرز کا امدادی پیکج حاصل کرلیا تھا۔

پیکج کے مطابق پاکستان کو 3 ارب ڈالر ایڈونس دیے جانے تھے، 3 ارب ڈالر کا ادھار تیل 3 سال تک دیا جانا تھا جبکہ بیلنس آف پیمنٹ کے لیے ایک سال تک تین ارب ڈالر پاکستان کے اکاؤنٹ میں بھی رکھے جانے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں