The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب امریکا سے ایک ارب ڈالر مالیت کا اسلحہ خریدے گا

واشنگٹن: سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے امریکا دورے کے موقع پر اہم معاہدہ سامنے آیا جس کے تحت امریکا نے سعودی عرب کو ایک ارب ڈالر مالیت کا اسحلہ فروخت کرنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب امریکا سے اربوں ڈالر مالیت کے ہتھیار خریدے گا، دنوں ملکوں کے درمیان ہونے والے معاہدے میں 67 کروڑ ڈالر کے ٹینک شکن مزائل کی فروخت بھی شامل ہے۔

معاہدے کے مطابق امریکا سعودی عرب کو 6600 ٹاؤ میزائل بھی فروخت کرے گا، علاوہ ازیں دیگر معاہدوں کے تحت ہیلی کاپٹروں کی مرمت اور دیکھ بھال کے لیے 10.3 کروڑ ڈالر جبکہ مختلف نوعیت کی زمینی سواریوں کے آلات کے لیے 30 کروڑ ڈالر شامل ہیں۔

محمد بن سلمان امریکا پہنچ گئے، آج ڈونلڈ ٹرمپ سے اہم ملاقات کریں گے

مقامی میڈیا کے مطابق اسلحے سے متعلق اس معاہدے کی تیاریاں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے گزشتہ سال مئی میں سعودی عرب کے دورے کے وقت سے کی جا رہی تھیں، البتہ ماضی میں طے پانے والے 110 ارب ڈالر کے اسلحہ معاہدوں کے بڑے حصوں پر ابھی تک عمل درامد نہیں ہوسکا۔

خیال رہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان تین ہفتوں کے سرکاری دورے پر پہلے واشنگٹن پہنچے تھے جہاں انہوں نے وائٹ ہاؤس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کی بعد ازاں محمد بن سلمان واشنگٹن میں اپنی قیام گاہ پر امریکا کی کئی بڑی کمپنیوں کے سربراہان سے بھی ملے۔

سعودی فرمانروا شاہ سلمان نے اپنےبیٹے محمد بن سلمان کوولی عہد مقررکردیا

ملاقات میں دو طرفہ تجارتی تعاون کو بڑھانے کے طریقہ کار پر غور کیا گیا اور عرب امریکا کے درمیان ٹیکنالوجی کی ترقی جیسے امور کے علاوہ مختلف شعبوں میں کئی منصوبوں کا بھی جائزہ لیا گیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں