The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں بڑے پیمانے پرتقرریوں اوربرطرفیوں کا شاہی فرمان

ریاض: سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ملک میں بڑے پیمانے پر تقرریوں اوربرطرفیوں کا شاہی فرمان جاری کردیا۔

تفصیلات کےمطابق ریاض سے جاری شاہی فرمان کے مطابق شاہ سلمان نےایئرفورس کے چیف آف اسٹاف اور کمانڈر کو ریٹائرکرکے فیاض الروائیلی کوسعودی فضائیہ کا نیا سربراہ مقررکردیا۔

ڈاکٹرخالدالبیراری اسسٹنٹ سیکریٹری ڈیفنس اورشہزادہ فیصل بن فہد بن مقرن صوبہ حائل کے ڈپٹی گورنر ہوں گے۔

شاہی فرمان کے مطابق ڈاکٹر تمیدارالرمرہ نائب وزیرمحنت اورعبدالررحمان بن صالح الہنیان شاہی مشیر ہوں گے اوران کا عہدہ جنرل کے برابرہوگا۔

شاہ سلمان نے صوبہ الجوف کے گورنر کو برطرف کرکے شہزادہ بندر بن سلطان کو نیا گورنر تعینات کیا ہے۔

ریاض سے جاری شاہی فرمان کے مطابق لیفٹیننٹ جنرل فہد بن ترکی جوائنٹ فورسز کے کمانڈر لگائے گئے ہیں۔


سعودی عرب میں کرپشن کےالزام میں 11 شہزادے اور4 وزیرگرفتار


خیال رہے کہ 5 نومبر2017 کو سعودی عرب میں کرپشن کے الزام میں گیارہ شہزادے، چارموجودہ اور سابق وزرا کوحراست میں لیا گیا تھا۔


سعودی فرمانروا شاہ سلمان نے اپنےبیٹے محمد بن سلمان کوولی عہد مقررکردیا


یاد رہے کہ 21 جون 2017 کو سعودی فرمانروا شاہ سلمان نے ولی عہدمحمدبن نائف کو برطرف کرکے اپنے بیٹے محمد بن سلمان کوولی عہد مقررکیا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں