یمنی ہوائے اڈے اور ایئربیس پر سعودی عسکری اتحاد کے شدید فضائی حملے
The news is by your side.

Advertisement

یمنی ہوائی اڈے اور ایئربیس پر سعودی عسکری اتحاد کے شدید فضائی حملے

ریاض: سعودی عسکری اتحاد کی جانب سے یمنی دارالحکومت صنعا کے ہوائی اڈے اور ایئربیس پر شدید فضائی حملے کیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی اتحادی افواج کی جانب سے صنعاء کے ہوائی اڈے اور اس سے ملحقہ الدیلمی ایئربیس پر شدید حملے کیے ہیں، حملے پیر اور منگل کی درمیانی شب میں کیے گئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مذکورہ حملے عسکری اتحاد نے اپنے جنگی طیاروں کے ذریعے کیے، تاہم اس حملے میں ہلاکتوں سے متعلق کسی قسم کی تصدیق نہیں کی گئی۔

قبل ازیں یمن میں برسرپیکار ایران نواز حوثی باغیوں کی جانب سے دبئی کے ہوائی اڈے پر ڈرون حملہ کیا گیا تھا، بعد ازاں عرب اتحاد کی جانب سے یمن میں فضائی حملے کیے گئے۔

یمن: ممکنہ جنگی جرائم میں تمام پارٹیاں ملوث ہیں، اقوام متحدہ

خیال رہے کہ دو روز قبل حوثیوں کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ ان کی راکٹ فورس نے متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر ڈرون حملہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات ایوی ایشن اتھارٹی نے بعد ازاں موقف اختیار کیا تھا کہ ہوائی اڈے کے ٹرمنل 1 پر سپلائی پر متعین گاڑی کے ساتھ حادثہ پیش آیا تھا تاہم ہوائی اڈے پر کسی قسم کا کوئی ڈرون حملہ نہیں ہوا۔

دوسری جانب اقوامِ متحدہ کے تفتیش کاروں نے کہا ہے کہ خونی جنگ میں تمام پارٹیاں ملوث ہیں جس کی وجہ سے وہ سبھی یمن میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے لیے ذمہ دار ہیں۔ تاہم سعودی عرب کی جانب سے اقوام متحدہ کی رپورٹ کو غیر شفاف قرار دیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں