The news is by your side.

40 برس سے مسافروں کو کھانا کھلانے والا سعودی شہری

ریاض: سعودی عرب میں ایک شخص نے 40 برس سے مسافروں کو کھانا کھلا کر مثال قائم کردی، مذکورہ شخص کی بیٹھک ہر خاص و عام کے لیے کھلی ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق ایک سعودی شہری شیخ محمد بن جروح الشمری حائل الجو روڈ پر 40 برس سے مسافروں کو مفت کھانا کھلا رہا ہے۔

سعودی شہری نے عجائب گھر نما بیٹھک بنا کر نیا ریکارڈ قائم کیا ہے، 40 برس سے وہ یہاں آنے جانے والوں کی ضیافت بھی کرتے ہیں اور انہیں عجائب گھر نما بیٹھک دیکھنے کا موقع بھی فراہم کر رہے ہیں۔

سعودی شہری نے اپنی بیٹھک کو قہوے، خوشبو اور شیشے کے لیے استعمال ہونے والی خوبصورت اور نادر اشیا سے سجا رکھا ہے۔

الشمری کا کہنا ہے کہ انہوں نے تقریباً 48 برس قبل بیٹھک قائم کی تھی، اس کا مقصد مہمانوں کی خدمت اور ان سے رشتے ناتے مضبوط کرنا تھا۔ بیٹھک قائم کرنے کا مقصد اس سے کچھ کمانا تھا اور نہ ہوگا۔

وہ روزانہ یہاں پر مسافروں کی ضیافت بھی کرتے ہیں اور انہیں کھانا پیش کرتے ہیں۔

الشمری کا کہنا تھا کہ وزارت سیاحت نے انہیں بیٹھک کو عجائب گھر میں تبدیل کرنے کی پیشکش کی تھی لیکن انہوں نے شکریے کے ساتھ وزارت کی پیشکش مسترد کردی۔

وہ کہتے ہیں کہ ماضی کی طرح مستقبل میں بھی اپنی بیٹھک سیاحوں اور راہ گیروں کے لیے کھلی رکھیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں