The news is by your side.

Advertisement

سعودی شیئرز مارکیٹ میں ریکارڈ کمی، سرمایہ کار پریشان

ریاض: کرونا وائرس اور تیل کے نرخوں میں زبردست کمی کے بعد سعودی شیئرز مارکیٹ میں ریکارڈ کمی دیکھی جارہی ہے، خلیجی شیئرز مارکیٹ میں بھی مندی کا سلسلہ جاری ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی شیئرز مارکیٹ میں رواں ہفتے کے آغاز پر نومبر 2008 کے بعد ریکارڈ کمی دیکھی گئی ہے، سعودی شیئرز کی قدر میں 8.3 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق 100 کمپنیوں کے شیئرز کی قدر 10 فیصد تک کم ہوگئی ہے جبکہ دیگر شیئرز میں کمی کا تناسب 7 اور 5 فیصد ریکارڈ کیا گیا ہے۔

شیئرز کا لین دین 7.15 ارب ریال کا رہا، یہ ستمبر 2019 کے بعد سے کیش میں شیئرز کے لین دین کی سب سے بڑی شرح ہے۔

خلیجی شیئرز مارکیٹ میں بھی گراوٹ دیکھی گئی، کویت اسٹاک ایکسچینج میں 10 فیصد، دبئی میں 7.9 فیصد اور ابو ظہبی مارکیٹ میں 5.4 فیصد کی کمی ریکارڈ ہوئی۔

خلیجی شیئرز مارکیٹ میں یہ کمی گذشتہ ہفتے کے آخر میں تیل کے نرخوں میں رونما ہونے والی زبردست کمی کے بعد ہوئی ہے۔ تیل کے نرخ گزشتہ ہفتے 10 فیصد کم ہوئے تھے، جولائی 2017 کے بعد سے یہ تیل کے نرخوں میں ریکارڈ کمی تھی۔

تیل کے نرخوں میں یہ کمی کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر ہوئی ہے۔

خیال رہے کہ کرونا وائرس کے باعث دنیا بھر کی معیشتوں کو نقصان پہنچنے کا سلسلہ جاری ہے، گزشتہ ماہ سے یورپی و ایشیائی اسٹاک مارکیٹس میں شدید مندی دیکھی جارہی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں