The news is by your side.

Advertisement

سعودی محکمہ ٹریفک کی گاڑی مالکان کیلئے اہم ہدایت جاری

ریاض : سعودی محکمہ ٹریفک نے گاڑی کے مالک کی جانب سے کسی دوسرے شخص کو عارضی طور پر گاڑی دینے سے متعلق ہدایت جاری کردی۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عرب کے محکمہ ٹریفک نے ٹؤئٹر پر شہری کی جانب سے پوچھے گئے سوال پر کہا کہ اگر گاڑی کسی شخص کے نام پر رجسٹرڈ ہے تو اسے صرف رجسٹریشن کا حامل شخص ہی چلا سکتا ہے، کسی دوسرے شخص کو گاڑی چلانے کےلیے ضروری ہے کہ اس کے پاس این او سی ہو۔

ٹریفک پولیس کا کہنا تھا کہ ’کسی کو گاڑی دینے کے لیے بنائی جانے والی ’تفویض‘ ( این او سی) کے لیے لازمی ہے کہ فریقین کے نام پر کسی قسم کا چالان باقی نہ ہو۔

واضح رہے کہ ابشر سسٹم کے ذریعے گاڑی کسی کو عارضی طور پر دینے کے لیے محکمہ ٹریفک پولیس کے ذریعے ’تفویض‘ ( این او سی) جاری کرائی جاتی ہے۔

خیال رہے قانون کے مطابق کسی دوسرے کی گاڑی بغیر ’تفویض‘ چلانا ٹریفک قانون کی خلاف ورزی شمار کیا جاتا ہے، اگر کوئی اس قانون کی خلاف ورزی کرتا پایا جائے تو اسے لاک اپ کردیا جاتا ہے اور گاڑی کے اصل مالک کی تھانے آمد تک لاک اپ سے رہائی ممکن نہیں ہوتی۔

محکمہ ٹریفک نے کہا کہ اگر عارضی طور پر گاڑی چلانے والے شخص نے کسی ٹریفک قانون کی خلاف ورزی کی تو خودکار چالان اصل مالک کے نام بنے گا جس کے نام گاڑی رجسٹرڈ ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں