The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کے پانچ شہروں میں خواتین کے لیے ڈرائیونگ اسکولز قائم

ریاض: سعودی عرب میں خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت ملنے کے بعد پانچ شہروں میں خواتین کے لیے ڈرائیونگ اسکولز قائم کردئیے گئے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سعودی عرب میں محکمہ ٹریفک کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر جنرل محمد بن عبداللہ الیسامی کا کہنا ہے کہ مملکت میں خواتین کی ڈرائیونگ سے متعلق تمام مطلوبہ امور کی تیاری مکمل کرلی گئی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ بعض سعودی جامعات کے تعاون سے خواتین کے لیے کئی ماڈل ڈرائیونگ اسکولز بھی متعارف کروا دئیے گئے ہیں، الیسامی کے مطابق ریاض، جدہ، دمام، مدینہ منورہ اور تبوک میں خواتین کے لیے پانچ ڈرائیونگ اسکولز کا کام کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔

علاوہ ازیں ان پانچ شہروں کے علاوہ سعودی عرب کے دوسرے شہروں میں بھی ڈرائیونگ اسکولز کے افتتاح پر غور کیا جارہا ہے، شعبہ ٹریفک کے سربراہ نے بتایا کہ جن جامعات کے تعاون سے ڈرائیونگ اسکولز کے قیام کے منصوبے پر عمل جاری ہے، وہ مملکت میں خواتین کو اعلیٰ سطح پر ڈرائیونگ کی تعلیم دینے کے لیے پرعزم ہیں۔

جامعات کی طالبات کو تعلیم کے اوقات میں ہی ڈرائیونگ کی تربیت دی جائے گی اور طلباء کو ڈرائیونگ کے لیے علیحدہ سے وقت نکالنے کی ضرور پیش نہیں آئے گی۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب میں ڈرائیونگ کےلیےخواتین کی عمر18 سال مقرر

واضح رہے کہ سعودی وزارت داخلہ نے ٹریفک کی قوانین کو نافذ کرنے کے حوالے سے شاہی فرمان جاری کیا تھا، جس میں خواتین کی ڈرائیونگ کرنے کی عمر 18 سال مقرر کی گئی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں