The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں 24 جون سے قبل خواتین کی ڈرائیونگ پر جرمانہ ہوگا

ریاض: سعودی عرب میں 24 جون سے قبل خواتین کے گاڑی چلانے پر 500 سے 900 ڈالر جرمانہ ہوگا اور گاڑی بھی ضبط کی جاسکتی ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عرب کی جنرل ٹریفک اتھارٹی کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر محمد البسامی نے کہا ہے کہ متعلقہ حکام ٹریفک قوانین کو ہر صورت میں لاگو کریں گے، اگر خواتین تاریخ سے قبل گاڑی چلاتی پائی جاتی ہیں تو انہیں نو سو ریال تک چالان اور گاڑی بھی ضبط ہوسکتی ہے۔

واضح رہے کہ سعودی حکومت نے 24 جون بروز اتوار خواتین کو گاڑی چلانے کی اجازت دی ہے مگر اس سے قبل خواتین کی ڈرائیونگ پر پابندی ہے اور ایسا کرنے کو ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی تصور کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب: خواتین کے ڈرائیونگ سے متعلق تمام تیاریاں مکمل کر لی گئیں

دوسری جانب سعودی عرب کے شہر الدمام میں واقع امام عبدالرحمان بن فیصل یونیورسٹی کے ڈرائیونگ اسکول میں اب تک 67 خواتین کو ڈرائیونگ لائسنس جاری کیے جاچکے ہیں جبکہ اس اسکول میں ڈرائیونگ سیکھنے کے لیے 13 ہزار خواتین نے اپنے ناموں کا اندراج کرایا ہے۔

ڈرائیونگ اسکول سے سعودی خواتین کو چھ مراحل میں ڈرائیونگ لائسنس جاری کیے جارہے ہیں، ان میں ابتدائی رجسٹریشن، اسکول کی ویب گاہ پر رجسٹریشن، تربیتی پروگرام کے لیے اندراج، نظری تربیت، عملی تربیت اور محکمہ ٹریفک کو کار چلانے کا امتحان دینا شامل ہیں۔

ڈرائیونگ اسکول میں جاری تربیتی پروگرام کا دورانیہ 27 گھنٹے کا ہے، اس میں پانچ گھنٹے نظری تربیت، دو گھنٹے ٹریفک تحفظ اور سیکیورٹی کے قواعد و ضوابط کی کلاس اور 20 گھنٹے عملی تربیت کے لیے مختص کیے گئے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں