The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب اور یواےای نے پاکستان میں اربوں ڈالرسرمایہ کاری کی پیشکش کردی، امریکی اخبار کا دعویٰ

نیویارک : امریکی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی عرب اور یواے ای نے پاکستان میں اربوں ڈالرسرمایہ کاری کی پیشکش کردی ہے ، دوست خلیجی ممالک 30 ارب ڈالر کے قرضے اور سرمایہ کاری کے لئے تیار ہے ، سعودی ولی عہد معاہدوں پر دستخط کیلئے فروری میں پاکستان آئیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی کی معیشت کی بہتری کے لئے دوست ممالک میدان میں آگئے، امریکی اخبار وال اسٹریٹ جنرل کا کہنا ہے کہ سعودی عرب اور یو اے ای پاکستان میں تیس ارب ڈالرکی سرمایہ کاری اورقرضےفراہم کریں گے، یہ ڈیل پاکستان کیلئے بڑا بریک تھرو ثابت ہوگی، دونوں ممالک سے مجموعی طور پر بارہ ارب ڈالر کے قرضے ملنے کا امکان ہے۔

امریکی اخبار کا کہنا ہے کہ سعودی حکومت نے پہلے ہی پاکستان کوتین ارب ڈالرکیش اورتین ارب ڈالر کی خام تیل کیلئے موخر ادائیگوں کی سہولت فراہم کردی ہے جبکہ مزید دس ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔جس میں ریفائنری اور پیٹروکیمیکل کمپلیکس شامل ہے، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی آمد پر پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے معاہدوں پر دستخط متوقع ہیں۔

مزید پڑھیں : پاکستان اور یو اے ای میں 3 ارب ڈالر کے پیکیج پر دستخط ہوگئے

وال اسٹریٹ جنرل کے مطابق یو اے ای نے بھی پاکستان کو تین ارب ڈالر کیش دینے اورتین ارب ڈالر کی موخر ادائیگیوں کی سہولت دی ہے اور پیکیج پردستخط ہوگئے ہیں، معاہدے کےتحت تین ارب ڈالرتین قسطوں میں پاکستان کو فراہم کیے جائیں گے، پہلی قسط اسی ہفتے ملے گی۔

امریکی اخبار نے کہا دوست ممالک کی مدد کے بعد پاکستان کو آئی ایم ایف پلان لینے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

دوسری جانب وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا قطرپاکستان سے دوگیس پاور پلانٹ خریدے گا اور لگائے گا اور زرعی شعبےمیں انفرااسٹرکچر کیلئے سرمایہ کاری بھی کرے گاجبکہ قطر نے پاکستان سے چاول کی خریداری پرپابندی اٹھالی ہے اور پی آئی اے کی بحالی میں بھی ادا کرے گا۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے نومبر 2018 میں یو اے ای کا دورہ کیا تھا، جہاں انھوں نے اہم شخصیات سے ملاقات کی جبکہ ماضی میں سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کے لیے امدادی پیکیج کا اعلان کیا گیا، جس کے بعد پاکستان معیشت میں واضح استحکام آیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں