The news is by your side.

Advertisement

غیر ملکی کرنسی کا کاروبار : اسٹیٹ بینک نے بڑی پابندی لگادی

کراچی : اسٹیٹ بینک نے غیر ملکی کرنسی کا کاروبار کرنے والے تجارتی پلیٹ فارمز پر پابندی لگادی، جس کے بعد ایزی فاریکس اور اوکٹافکس اب ڈالر کا غیرقانونی کاروبار نہیں کرسکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اسٹیٹ بینک نے ملک میں تمام غیرملکی کرنسی کا کاروبار کرنے والے تجارتی پلیٹ فارمز کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے پابندی لگادی۔

مرکزی بینک کا کہنا تھا کہ ایزی فاریکس اور اوکٹافکس اب ڈالر کا غیرقانونی کاروبار نہیں کرسکیں گے۔

اسٹیٹ بینک نے شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ ان پلیٹ فارمز کو نہ تو اسٹیٹ بینک اور نہ ہی سیکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان کے ذریعے ریکولیٹ کیا جاتا ہے۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ ملک میں یوٹیوب اور دیگر سوشل میڈیا ویب سائٹس ڈیجیٹل پلیٹ فارمز موجود ہیں، جوغیرقانونی طریقوں سے ملک میں غیرملکی کرنسی فروخت کرنے میں ملوث ہیں۔

مرکزی بینک کے مطابق زیادہ تر پاکستانی اب بنیادی یا غیر فعال آمدنی کے ذریعہ ایسے ہی تجارتی پلیٹ فارمز پر انحصار کر رہے ہیں۔

مرکزی بینک نے مجاز ڈیلرز کو یہ بھی مشورہ دیا کہ وہ FERA کے متعلقہ سیکشنز کی تعمیل کو یقینی بنائیں اور کسی بھی ادائیگی کے چینل کے ذریعے اپنے صارفین کی طرف سے اس طرح کی تمام فاریکس ٹریڈنگ، CFD ٹریڈنگ، مارجن ٹریڈنگ ویب سائٹس/ ایپلیکیشنز/ پلیٹ فارم پر ادائیگیوں کو روکنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں