The news is by your side.

Advertisement

اسٹیٹ بینک نے درآمدی اشیا پرکیش مارجن 100 فیصد کردیا

کراچی : ڈالرکی قدر میں اضافے اور زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی کے باعث اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے درآمدی اشیا پرکیش مارجن 100 فیصد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں اضافے کے بعد اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے درآمدی اشیا پرکیش مارجن 100 فیصد کردیا ہے جس کے بعد اشیا کی درآمد کے لیے بینک اکاؤنٹ میں 100 فیصد رقم ہونا ضروری ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے جن اشیا کی درآمد پر100 فیصد مارجن کا نفاد کیا گیا ہے، ان میں کاروں، بسوں، گاڑیوں کے ٹائر، گاڑیوں کی سی این جی کٹ، نئے پرانے موٹرسائیکل، ایئرکنڈیشنگ مشین، اے سی پارٹس، ایئرپمپ، پیپرپورڈ، پورٹیبل کمپیوٹر، سم کارڈز، پرنٹرز، پلاسٹک بیگ سمیت دیگرچیریں شامل ہیں۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق ان اقدامات سے غیرضروری اور لگژری درآمدی اشیا کی حوصلہ شکنی ہوگی۔

دوسری جانب انٹربینک میں روپے کی قدر میں کمی کا سلسلہ جاری ہے آج بھی ڈالر کی قدر میں 76 پیسے کا اضافہ ہوچکا ہے جس کے بعد ڈالر 128.25 پیسے کا ہوگیا ہے۔

واضح رہے کہ روپے کی قدر میں کمی کے بعد غیرملکی قرضوں کے حجم میں بھی خطیر اضافہ ہوگیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں