The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے6منزل سے زائد تعمیرات پرپابندی سے متعلق فیصلہ واپس لے لیا

کراچی : سپریم کورٹ نے 6منزل سے زائد تعمیرات پرپابندی سےمتعلق فیصلہ واپس لےلیا اور شہر میں قانون کے مطابق تعمیرات جاری رکھنے کا حکم دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں کراچی میں 6منزلوں سے زائد عمارتوں کی تعمیر پر پابندی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، سماعت میں عدالت نے 6منزل سے زائد تعمیرات پر پابندی سے متعلق فیصلہ واپس لے لیا اور شہر میں قانون کے مطابق تعمیرات جاری رکھنے کا حکم دیا۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے قوانین کے مطابق تعمیر کرسکتے ہیں۔

خیال رہے سپریم کورٹ نے6 ماہ پہلے 6 سے زائد منزل والی عمارتوں پرپابندی لگائی تھی، جس کے بعد 6 منزل سے زائد عمارت پر پابندی کے فیصلے کو چیلنج کیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں : کراچی: 6 منزل سے بڑی عمارت تعمیر کی اجازت نہیں، نوٹی فکیشن جاری

یاد رہے فروری 2018 میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی (ایس بی سی اے) نے سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں 6 منزلہ تجارتی یا رہائشی عمارتوں کی تعمیرات کا نوٹی فکیشن جاری کیا تھا۔

نوٹی فکیشن کے مطابق کسی بلڈر کو 6 منزل سے بڑی عمارت اور اس کی بکنگ کی اجازت نہیں دی جائے گی، مکان تعمیر کرنے سے قبل بلڈرز کو حلف نامے جمع کروانے ہوں گے۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس مارچ 2017 میں سپریم کورٹ نے بلند عمارتوں کی تعمیرات پر پابندی عائد کرتے ہوئے شہر میں صرف 6 منزلہ عمارت کی اجازت دی تھی علاوہ ازیں فلاحی اور رفاحی پلاٹوں پر تعمیر شادی ہال یا رہائشی عمارات مسمار کرنے کے احکامات بھی جاری کیے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں