site
stats
پاکستان

ضرورت پڑی تو والیم 10 سامنے لے آئیں گے، سپریم کورٹ

اسلام آباد: جے آئی ٹی رپورٹ پر سماعت کے دوران رپورٹ کی جلد نمبر 10 کا تذکرہ بھی ہوا جس پر جسٹس اعجاز افضل نے واضح کیا کہ کچھ بھی خفیہ نہیں، ضرورت پڑنے پر والیم 10 کو بھی سامنے لے آئیں گے۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے شریف فیملی کے وکیل سے مکالمے میں کہا کہ کیا آپ کے حق میں بعد میں کوئی چیز آتی ہے تو کیا ہم چھپالیں گے؟ جے آئی ٹی نے سوئٹزرلینڈ سے معلومات مانگی ہیں، جواب تاخیر سے آیا تو شیئر کیا جائے گا۔

 

اسلام آباد: جے آئی ٹی رپورٹ پر سماعت کے دوران رپورٹ کی جلد نمبر 10 کا تذکرہ بھی ہوا جس پر جسٹس اعجاز افضل نے واضح کیا کہ کچھ بھی خفیہ نہیں، ضرورت پڑنے پر والیم 10 کو بھی سامنے لے آئیں گے۔

تفصیلات کے مطابق جے آئی ٹی رپورٹ کی جلد نمبر دس میں کیا ہے؟ اس بارے میں سپریم کورٹ نے خود اشارہ دے دیا، جلد 10 کا تذکرہ سامنے آنے پر جسٹس عظمت سعید نے کہا ہے کہ والیم 10 میں لکھا ہے کہ کتنی قانونی معاونت آتی ہے کتنی نہیں۔

جسٹس اعجاز افضل نے واضح کیا کہ  کوئی چیز خفیہ نہیں ضرورت پڑنے پر والیم 10 کھول دیں گے، جے آئی ٹی کو دفتر خالی کرنے کا کہہ دیا جے آئی ٹی کی جانب سے مزید دستاویزات نہیں آسکتیں۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے شریف فیملی کے وکیل سے مکالمے میں کہا کہ کیا آپ کے حق میں بعد میں کوئی چیز آتی ہے تو کیا ہم چھپالیں گے؟ جے آئی ٹی نے سوئٹزرلینڈ سے معلومات مانگی ہیں، جواب تاخیر سے آیا تو شیئر کیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top