The news is by your side.

Advertisement

عافیہ صدیقی کیس کو بیرون ملک قید پاکستانیوں کے کیس سے منسلک کرنے کا حکم

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کوعافیہ صدیقی کیس کو بیرون ملک قید پاکستانیوں کے کیس سے منسلک کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے عافیہ صدیقی وطن واپسی کیس کی سماعت کی۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کوبتایا کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی ہر تین ماہ بعد کونسلر سے ملاقات ہوتی ہے، جس پر جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ جائزہ لیں، کیا عافیہ صدیقی کی سزا پاکستان میں پوری ہو سکتی ہے؟

جسٹس عظمت سعید کا کہنا تھا کہ عافیہ کا معاملہ بھی دیگر پاکستانی قیدیوں کیساتھ اٹھانے سے شاید کچھ ہوجائے۔

عدالت نے کیس بیرون ملک قید پاکستانیوں کے کیس سے منسلک کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔

مزید پڑھیں : ڈاکٹر عافیہ اپنی سزا کے خلاف اپیل دائرکرنے کیلئے آمادہ ہوگئیں، شاہ محمودقریشی

یاد رہے اپریل میں سپریم کورٹ نے امریکی جیل میں قیدڈاکٹر عافیہ صدیقی وطن واپسی کیس میں اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کیا تھا۔

خیال رہے کی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی بہن ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے آئین کے آرٹیکل184(3)کے تحت درخواست دائر کی تھی ، جس میں استدعا کی گئی تھی کہ حکومت کو حکم دیا جائے کہ عافیہ کو امریکی جیل سے واپس لانے کے لئے اقدامات اٹھائے۔

واضح رہے کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کودوہزاردس میں امریکی عدالت نے افغانستان میں امریکی فوجیوں پرحملہ کرنے کے الزام میں چھیاسی سال قید کی سزاسنائی تھی، وہ ٹیکساس کی جیل میں قید ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں