site
stats
پاکستان

سپریم کورٹ نے 24 منرل واٹر کمپنیوں کے پانی فروخت کرنے پر پابندی لگادی

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے 24 منرل واٹر کمپنیوں پر پابندی عائد کردی۔ سپریم کورٹ کا کہنا ہے کہ جب تک صاف پانی کی تسلی نہ ہو فروخت کی اجازت نہیں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے 24 منرل واٹر کمپنیوں کے پانی فروخت کرنے پر پابندی لگادی۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ جب تک صاف پانی کی تسلی نہ ہو فروخت کی اجازت نہیں دیں گے۔ کمپنیوں کو ادراک ہونا چاہیئے گندا پانی فروخت نہیں کرنا، بڑی کمپنیاں ہیں لیکن پانی صاف نہیں، بچوں کا خیال رکھنا ہے۔

انہوں نے واضح طور پر کہا کہ عدالت کی تسلی تک پانی فروخت کی اجازت نہیں۔

اس موقع پر کمپنیوں کے وکیل نے کہا کہ پاکستان اسٹینڈرڈز اینڈ کوالٹی کنٹرول اتھارٹی (پی سی ایس کیو اے) کی رپورٹ منگوا لیں جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ رپورٹ ہم منگوالیں گے۔

عدالت کا مزید کہنا تھا کہ قوم کا مفاد دیکھنا ہے، کمپنی کے وکیل بڑی فیس لیتے ہیں۔ زعم میں نہ رہیں کہ بڑا وکیل کرنے سے ریلیف ملے گا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top