سپریم کورٹ کی پاناما جے آئی ٹی کو نیب میں بیان ریکارڈ کرانے کی ہدایت Panama JIT
The news is by your side.

Advertisement

پاناما جے آئی ٹی کو نیب میں بیان ریکارڈ کرانے کی ہدایت

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے نیب کی درخواست منظور کرتے ہوئے پاناما کیس کی جے آئی ٹی کو نیب میں بیانات ریکارڈ کرانے کی اجازت دیے دی۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف دائر نیب ریفرنس میں نیب حکام نے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کی تھی کہ جے آئی ٹی کے ممبران کا بیان ریکارڈ کرنے کی اجازت دی جائے۔

آج سپریم کورٹ نے یہ درخواست منظور کرتے ہوئے نیب کو اجازت دے دی کہ وہ جے آئی ٹی کے ممبران کا بیان ریکارڈ کرلے۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندے راشد حبیب نے بتایا کہ نیب چاہتی ہے کہ جے آئی ٹی ممبران کا بطور استغاثہ بیان ریکارڈ کرلیا جائے جس کے انہوں نے واجد ضیا سے رابطہ کیا تاہم انہوں نے عدالت کی اجازت کے بغیر نیب کو بیان ریکارڈ کرانے سے انکار کردیا۔

نیب نے اس مد میں سپریم کورٹ کو درخواست لکھی جس پر نیب کے نگراں جج جسٹس اعجاز الاحسن نے جے آئی ٹی ممبران کو بیان ریکارڈ کرانے کی اجازت دیتے ہوئے نیب کو ہدایت دی ہے کہ وہ سپریم کورٹ کی جانب سے متعین کردہ حدود سے باہر نہ نکلے اور فیصلے کے دائرے میں رہتے ہوئے جے آئی ٹی ممبران کا بیان ریکارڈ کرے تاکہ تحقیقات کا دائرہ کار آگے بڑھایا جاسکے۔


انہوں نے واجد ضیا کو ہدایت کی ہے کہ وہ نیب سے تعاون کریں اور اپنا بیان ریکارڈ کرائیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں