site
stats
پاکستان

توہین عدالت کیس، سپریم کورٹ نے نہال ہاشمی کا جواب مسترد کردیا

اسلام آباد : توہین عدالت کیس میں سپریم کورٹ نے نہال ہاشمی کا جواب مسترد کردیا، نہال ہاشمی پر دس جولائی کوفرد جرم عائد کیے جانے کا امکان ہے۔

سپریم کورٹ میں نہال ہاشمی توہین عدالت کیس کی سماعت جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں تین ر کنی بینچ نے کی، عدالت نے نہال ہاشمی کا جواب غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا۔

وکیل حشمت حبیب نے بتایا کہ نہال ہاشمی عمرہ کرنے گئے ہیں نو جولائی کو واپس آئینگے، سماعت ملتوی کی جائے۔

جسٹس اعجاز افضل نےکہاکہ نہال ہاشمی کوعدالت سے اجازت لیکر جانا چاہیے تھا۔

وکیل حشمت حبیب نے سپریم کورٹ کے فیصلے تک کارروائی روکنے کی استدعا کی، جسےعدالت نےمستردکردیا، وکیل حشمت حبیب نے کہا کہ نہال ہاشمی کیخلاف انتقامی کارروائیاں کی جا رہی ہے، اگر جرم ثابت ہو تو بھلے پھانسی دیدیں لیکن کارروائیاں رکوائی جائیں۔


مزید پڑھیں : لیگی رہنما نہال ہاشمی نے توہین عدالت نوٹس کا جواب سپریم کورٹ میں جمع کرادیا


جس پر جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیے کہ اس مقدمہ میں پھانسی کی سزا ہوتی ہی نہیں۔

سماعت کے بعد نہال ہاشمی کے وکیل نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ عدالت نے سوموٹو صرف ایک نوٹ پر لیا۔

یاد رہے کہ سابق لیگی رہنما اور سینیٹر نہال ہاشمی نے توہین عدالت سے متعلق شوکاز نوٹس کا جواب سپریم کورٹ میں جمع کرایا تھا، جس میں مؤقف اختیار کیا تھا کہ تقریر میں عدالت کی توہین کی نہ ججز اور جےآئی ٹی ممبران کو دھمکیاں دیں، توہین عدالت کیس میں خبروں، چیئرمین پی ٹی آئی کے ٹوئٹس کا سہارا لیا گیا جبکہ فوادچوہدری، ترجمان پی ٹی آئی اور اپوزیشن ارکان کا بھی سہارا لیا گیا۔

نہال ہاشمی نے اپنے جواب میں کہا تھا کہ میں نے خطاب میں کسی جے آئی ٹی رکن کا نام نہیں لیا، جو ٹرانسکرپٹ دیاگیا وہ میری تقریر کا وہ حصہ ہے جو ٹی وی پر دیکھایا گیا، میرے دیئے گئے ریکارڈ کے مطابق میرے خلاف کسی قانونی کارروائی کا جواز نہیں بنتا۔


مزید پڑھیں : نہال ہاشمی کی پانامہ کیس کی تحقیقات کرنیوالی جے آئی ٹی کو کھلے عام سنگین دھمکیاں


واضح رہے کہ ایک تقریب میں تقریر کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما سینیٹر نہال ہاشمی نےکہا تھا کہ احتساب کرنے والوں ہم تمہارا یوم حساب بنادیں گے، تم جس کااحتساب کر رہے ہو وہ نوازشریف کا بیٹاہے، ہم نے چھوڑنا نہیں تم کو آج حاضر سروس ہو کل ریٹائر ہوجاؤ گے، ہم تمہارے بچوں اور خاندان کے لیے پاکستان کی زمین تنگ کردیں گے۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے جے آئی ٹی سے متعلق نہال ہاشمی کے بیان کا نوٹس لے کر ان کا معاملہ پاناما عمل درآمد بینچ کو بھیج دیا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top