The news is by your side.

Advertisement

توہین عدالت کیس: سپریم کورٹ کا طلال چوہدری کو فیصلے کے دن حاضری یقینی بنانے کا حکم

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کا فیصلہ محفوظ کر لیا، فیصلے کے دن عدالت میں حاضری یقینی بنانے کا حکم جاری۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس کا فیصلہ بعد میں سنایا جائے گا، عدالتی بینچ نے طلال کو فیصلے کے دن حاضر ہونے کا حکم دے دیا۔

فیصلہ جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے محفوظ کیا، قبل ازیں سابق وزیر مملکت طلال چوہدری کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ کیس کا فیصلہ انتخابات کے بعد تک ملتوی کیا جائے۔

وکیل کی استدعا پر ریمارکس دیے بغیر جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ ہم نے فیصلے کی تاریخ نہیں دی۔ دوسری طرف اس کا امکان ہے کہ توہین عدالت کیس کا فیصلہ الیکشن کے بعد آئے گا۔

عدالتی بینچ نے فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے وکیل سے کہا ’فیصلے کے دن طلال چوہدری کمرۂ عدالت میں حاضری یقینی بنائیں۔‘

توہین عدالت کیس میں دانیال عزیزنااہل قرار


واضح رہے کہ طلال چوہدری کے خلاف پندرہ مارچ کو سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں فرد جرم عائد کرتے ہوئے چارج شیٹ جاری کر دی تھی۔

لیگی رہنما پر الزام ہے کہ انھوں نے ایک جلسے میں سپریم کورٹ کے خلاف توہین آمیز کلمات کہے تھے۔

سپریم کورٹ‌ نے نہال ہاشمی کی تحریری معافی قبول کر لی


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں